ملک ميں جعلی جمہوريت ہے،حکمران ملک کومائنس کرنےکےچکرميں ہيں،سعدرفیق

پاکستان میں جمہوریت ہے کہاں

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/07/Saad-Rafique-Nab-Case-Lhr-Pkg-02-07.mp4"][/video]

پیراگون ہاؤسنگ کيس ميں لاہور کی احتساب عدالت نےخواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے خلاف وعدہ معاف گواہ کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ملک ميں جعلی جمہوريت ہے،حکمران ملک کو مائنس کرنے کے چکروں ميں ہيں۔

جمعرات کو خواجہ برادران کے خلاف پيراگون ہاؤسنگ کيس کی لاہورکی احتساب عدالت ميں سماعت ہوئی۔کيس کے وعدہ معاف گواہ قيصرامین بٹ کی ایک بار پھرعدم پیشی پرعدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئےاسے گرفتار کر کے 8 جولائی کو پیش کرنے کا حکم ديا اور نیب سے بھی وضاحت مانگ لی۔خواجہ برادران کو حاضری مکمل کرانے کے بعد جانے کی اجازت دے دی گئی۔

عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں خواجہ سعد رفیق نے مائنس ون کے بيان پر وزيراعظم اور حکومت کو آڑے ہاتھوں ليا اور کہا کہ ہمارا سوال ہے کہ پاکستان میں جمہوریت ہے کہاں، یہ جعلی جمہوریت پاکستان کو دی گئی،کیا جمہوریت ایسی ہوتی ہے جس میں پاکستانیوں کی چیخیں نکل گئی ہیں۔

خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ وزرا کو صرف گاليوں اور کھوکھلے دعوؤں کے علاوہ کوئی کام نہيں آتا،انہيں چاہيے کہ يہ تسليم کرليں کہ يہ لوگوں کے ووٹ سےنہیں بلکہ جعلسازی سے آئے ہیں۔

PARAGON HOUSING CASE

Tabool ads will show in this div