معروف شخصیات کاپاکستان میں تشدد کو جرم قراردینے کامطالبہ

تشدد ایک جرم ہے
Jun 27, 2020

پاکستان کے معروف اداکاروں اور گلوکاروں نے سوشل میڈیا پرمتحد ہوتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ " تشدد ایک جرم ہے، اسے جرم قراردیا جائے"۔

ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان اور جسٹس پروجیکٹ آف پاکستان کی جانب سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز کے مطابق ماضی میں تشدد کے خلاف قانون سازی کرنے کی متعدد کوششیں کی گئیں۔

پریس ریلیزکے متن کے مطابق " رواں سال فروری میں پیش کیا جانے والا ٹارچراورکسٹوڈیل ڈیتھ (روک تھام اور سزا) بل 2020 ، سینیٹ کی کمیٹی کے سامنے زیر التوا ہے اور یہ ایک ایسا جامع قانون منظور کرنے کا موقع ہے جس میں صنفی تفریق پر مبنی تشدد کے تمام پہلوؤں کا احاطہ کیا گیا ہے خصوصا خواتین متاثرین کیخلاف تشدد "۔

اس میں مزید کہا گیا ہے کہ سول سوسائٹی کو چاہئے کہ وہ اس طرح کی تمام قانون سازی کا تنقیدی جائزہ لیتی رہے اور حکومت ان کی آوازوں کا سنا جانا یقینی بنائے۔

پریس ریلیز کے مطابق "آئیں ہم ہرسال 26جون کو تشدد کا نشانہ بننے والے افراد کی حمایت کیلئے عالمی دن منائیں تا کہ اس استثنیٰ یا معافی کے کلچر کوختم کیا جاسکے اور اس غیرانسانی عمل کے خلاف جامع قانون سازی کی جاسکے "۔

Vaneeza Ahmad

Tabool ads will show in this div