ڈاکٹرعافیہ کامعاملہ عالمی ہے،سندھ ہائیکورٹ مداخلت نہیں کرسکتی،جسٹس عمرسیال

ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کی درخواست پر سماعت ہوئی
Jun 24, 2020

سندھ ہائی کورٹ نے ڈاکٹرعافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق درخواست کی مزید سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔جسٹس عمر سیال نے ریمارکس دئیے کہ ڈاکٹرعافیہ کاعالمی معاملہ ہے،سندھ ہائیکورٹ مداخلت نہیں کرسکتی۔

بدھ 24 جون کو ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کی درخواست پر سماعت ہوئی۔

دوران سماعت درخواست گزار ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے مؤقف اپنایا کہ عافیہ صدیقی کی واپسی سے متعلق وفاق کوئی اقدامات نہیں کر رہا جبکہ امریکا میں کرونا وائرس کے باعث روز درجنوں لوگ مر رہے ہیں۔

جسٹس عمر سیال نے استفسار کیا کہ ہائیکورٹ کے حکم نامے پر امریکا میں کیسے عمل درآمد ہوسکتا ہے؟ کیا ہائی کورٹ امریکی صدر کو حکم دے کہ جیلوں سے ملزمان رہا کرے؟

فوزیہ صدیقی نے مؤقف اپنایا کہ امریکا میں عافیہ صدیقی مر بھی گئی تو اس کی لاش بھی نہیں دیں گے۔ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کا کیس 17 سال سے لٹکایا جا رہا ہے۔

جسٹس عمر سیال نے ریمارکس دیے کہ ڈاکٹر عافیہ کا عالمی معاملہ ہے اس لیے سندھ ہائیکورٹ مداخلت نہیں کرسکتی۔ عدالت جذبات پر نہیں قانون کے مطابق فیصلہ کرتی ہے۔ ریمارکس دیے کہ کیس کو موسم گرما کی تعطیلات کے بعد ہی سنا جائے گا۔

عدالت نے درخواست کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔

Dr Aafia Siddiqui

Tabool ads will show in this div