اقتصادی جائزہ رپورٹ آج پیش کی جائے گی

مشیر خزانہ اکنامک سروے پیش کرینگے

حکومت کی جانب سے اقتصادی کارکردگی کے حوالے سے اکنامک سروے آج 11 جون جمعرات کو جاری کیا جائے گا۔

وفاقی حکومت کی جانب سے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ اقتصادی کارکردگی کے حوالے سے اکنامک سروے پیش کریں گے۔ موجودہ سال معاشی شرح نمو سمیت اہم شعبوں کے اہداف پورے نہ ہوسکے۔ معاشی شرح نمو 4 فیصد ہدف کے مقابلے میں منفی صفر اعشاریہ چار فیصد رہی۔

اکنامک سروے کے مطابق رواں مالی سال 2019-20 کے دوران صنعتی شعبے کی پیداواری گروتھ منفی 2.6 فیصد رہی ہے۔ اقتصادی جائزہ رپورٹ آج 11 جون دوپہر 3 بجے پیش کی جائے گی۔ سروے میں موجودہ مالی سال کی معاشی کارکردگی بیان کی جائے گی۔

اکنامک سروے کے جاری کردہ نکات کے مطابق زرعی شعبے کا 3.5 فیصد کا ہدف پورا نہ ہوا۔ صنعتی شعبے کی کارکردگی 2.3 فیصد ہدف کے مقابلے منفی 2.3 فیصد رہی۔ خدمات کے شعبے کا 4.8 فیصد ہدف پورا نہ ہوا، جب کہ شعبے کی کارکردگی منفی صفر اعشاریہ چھ فیصد ریکارڈ ہوئی، بجلی کی پیداوار اور گیس کی ترسیل میں نمایاں بہتری آئی، بجلی گیس سیکٹر کی گروتھ 1.5 فیصد ہدف کے مقابلے 17.7 فیصد رہی۔ تعمیراتی شعبے کی کارکردگی 1.5 فیصد ہدف کے مقابلے 8.1 فیصد۔ گندم، چاول، کپاس سمیت اہم فصلوں کی پیداوار ہدف سے کم رہی۔ کاٹن کی پیداوار 2.5 فیصد ہدف کے مقابلے منفی 4.6 فیصد رہی۔ دیگر فصلوں کی پیداوار 3.1 فیصد ہدف سے بھی زیادہ 4.6 فیصد رہی ہے۔

سروے رپورٹ کے مطابق جنگلات کے شعبے کا 2 فیصد ہدف پورا، کارکردگی 2.3 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ لائیو اسٹاک کا 3.7 فیصد ہدف پورا نہ ہوا، 2.6 فیصد گروتھ رہی۔ ماہی گیری کے شعبے کا 4 فیصد ہدف پورا نہ ہوا، صرف 0.6 فیصد گروتھ رہی۔ ہول سیل سیکٹر کی گروتھ 3.9 فیصد ہدف کے مقابلے منفی 3.4 فیصد رہی۔ لارج اسکیل مینوفیکچرنگ 1.3 فیصد ہدف تھا، کارکردگی منفی 7.8 فیصد رہی۔ مینوفیکچرنگ کارکردگی 2.5 فیصد ہدف کے مقابلے منفی 5.6 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ ہاوسنگ سروسز کی کارکردگی میں بہتری کے بعد 4 فیصد گروتھ کا ہدف پورا کرلیا گیا۔

دوسری جانب وفاقی حکومت کی جانب سے نئے مالی سال کا بجٹ 12 جون بروز جمعہ کو پیش کیا جائے گا۔ بجٹ اجلاس میں صرف چھیاسی ارکان شرکت کریں گے۔ اس موقع پر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے ٹف ٹائم دیئے جانے کا امکان ہے۔

ایوان میں حزب اختلاف کٹوتی کی تحاریک پر ووٹنگ سے دستبردار ہوگئی ہے، جس کے بعد کورم کی نشاندہی بھی نہیں کی جائے گی۔

قبل ازیں وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی اقتصادی کونسل کے اجلاس میں موجودہ مالی سال کے معاشی حالات اور آئندہ مالی سال کے اہداف کا جائزہ لیا گیا۔ اعلامئے کے مطابق حکومت کا کہنا ہے کہ رواں سال 30 جون تک 827 ارب روپے کے 149 منصوبے مکمل ہو جائیں گے۔

Economic Survey

BUDGET2020

Tabool ads will show in this div