فوج جمہوریت کی حامی ہے،سیاستدانوں کی ناکامی پرایکشن لےگی،شیخ رشید

Nov 30, -0001

ویب ڈیسک


اسلام آباد : عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ فوج جمہوریت کی مکمل حامی ہے، سیاستدان ناکام ہوں گے تو فوج صحیح وقت پر صحیح فیصلہ کریگی کہ ملک بچانا ہے یا جمہوریت، غالب امکان ہے کہ چیف جسٹس جاتے جاتے کوئی اہم فیصلہ سنا جائیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے سماء کے پروگرام ندیم ملک لائیو میں کیا۔


شیخ رشید کا کہنا ہے کہ حکومت نے یہ سمجھنا شروع کردیا کہ چیف جسٹس جاچکے ہیں، ابھی ان کے جانے میں کچھ وقت باقی ہے، غالب امکان ہے کہ چیف جسٹس جاتے جاتے کوئی اہم فیصلہ سناجائیں، لاپتہ افراد، میمو گیٹ، پرویز مشرف غدادی کیس اور کئی اہم مقدمات موجود ہیں۔


انہوں نے مزید کہا کہ میرا مسئلہ میزائل حملے ہیں جو پاکستانی عوام پر ہورہے ہیں، میزائل حملے حکومتی مرضی سے ہوتے ہیں، اب میزائل حملہ کہیں بھی ہوسکتا ہے۔


ندیم ملک سے گفتگو میں شیخ رشید نے کہا کہ تمام جماعتیں حکومت میں شمولیت کی خواہشمند ہیں، جماعت اسلامی، تحریک انصاف اور عوامی مسلم لیگ کی نظر حکومت پر نہیں، نواز شریف کے مشیر انہیں کوئی اچھا مشورہ نہیں دے رہے۔


ان کا کہنا ہے کہ حکومت خود کہہ رہی ہے کہ افراط زر 10 فیصد بڑھ چکی ہے،  موجودہ حکومت کچھ ڈیلیور نہیں کرسکتی، پنجاب میں 6 ماہ کے دوران اغواء کے ہزاروں مقدمات درج کئے گئے۔


شیخ رشید نے مزید کہا کہ فوج ہر طرح سے جمہوریت کے ساتھ ہے لیکن وہ ملک کو تباہ نہیں ہونے دینا چاہتی، جمہوریت کے ساتھ فوج کی ایمان، دین اور جان کے ساتھ کمٹمنٹ ہے، جب وہ ملک کو ڈوبتا دیکھے گی تو صحیح وقت پر صحیح فیصلہ کریگی کہ ملک بچانا ہے یا جمہوریت۔


سربراہ عوامی مسلم لیگ کا راولپنڈی واقعے پر کہنا ہے کہ میں اپنی سیاست ختم کرسکتا ہوں شیعہ سنی فساد کا متحمل نہیں ہوسکتا، پولیس افسران بتائیں واقعے کے روز مری کیا کرنے گئے تھے؟، پہلے ہی کہا تھا یہ ایک سازش ہے۔


بے نظیر قتل کیس میں پیپلزپارٹی کے 5 سال بعد فریق بننے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ پی پی رہنماؤں سے پوچھیں، ملکی تاریخ کے جتنے بڑے مقدمات ہیں ان کا فیصلہ ہوا ہے نہ ہوگا۔


پرویز مشرف کے خلاف غداری کے مقدمے سے متعلق ندیم ملک کے سوال پر شیخ رشید نے کہا کہ اس ملک میں بڑے آدمیوں کا ٹرائل نہیں ہوسکتا، مارشل لاء کے ساتھ ملک کی تباہی کا راستہ بھی روکنا چاہئے۔


انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کو سمجھنے کیلئے ایک نئی زندگی چاہئے، الطاف حسین کو کریڈٹ دینا ہوگا کہ اتنی دور بیٹھ کر پارٹی کو کنٹرول کررہے ہیں، ان کی گرفت اب بھی مضبوط ہے۔ سماء

کی

registered