آئندہ بجٹ میں نان فائلرز کیخلاف سخت اقدامات کرنے پرغور

ٹیکس چوروں، بڑی ٹرانزیکشنز کی چھان بین کا بھی فیصلہ

بجٹ 2020-21 میں نان فائلرز کے خلاف اقدامات سخت کرنے پر غور شروع کر دیا جبکہ بے نامی داروں، ٹیکس چوروں اور بڑی ٹرانزیکشنز کی چھان بین کا بھی فیصلہ کرلیا گیا۔

ایف بی آر ہیڈ کوارٹر میں ٹیکس انفارمیشن پروسیسنگ یونٹ قائم کر دیا گیا ہے جبکہ ٹیکس ڈیٹا کی چھان بین کے لیے آئی ٹی ماہرین تعینات کیے جائیں گے۔

اس کے علاوہ بیرون ملک تواتر سے سفر اور نئی گاڑیاں خریدنے والوں کو نوٹسز کے لیے خودکار نظام تشکیل دیا جائے گا۔ خودکار نظام کے ذریعے نوٹسز جاری ہونگے اور جرمانے کیے جائیں گے۔

فیلڈ فارمیشن سے حاصل ڈیٹا کی آئی ٹی کی مدد سے جانچ پڑتال بھی کی جائے گی۔ 51 سو ارب کا ہدف حاصل کرنے کے لیے فیلڈ فارمیشنز کو ہدایات جاری کر دی گئی۔

Tabool ads will show in this div