میئر کے اختیارات، سپریم کورٹ نے کمیٹی تشکیل دیدی

کام میں دلچسپی نہیں توعہدہ چھوڑ دیں، شیخ انصرپر اظہاربرہمی
فوٹو : آن لائن
فوٹو : آن لائن

سپریم کورٹ نے میئر اسلام آباد شیخ انصر عزیز کی سخت سر زنش کردی۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ آپ نے اسلام آباد کیلئے اب تک کیا ہی کیا ہے؟، کیا آپ من و سلویٰ کے منتظر ہیں؟، کام میں دلچسپی نہیں ہے تو عہدہ چھوڑ دیں۔ سپریم کورٹ نے میئر کے اختیارات کا معاملہ حل کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

میئر اسلام آباد کے اختیارات سے متعلق سپریم کورٹ میں کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس گلزار احمد نے شیخ انصر عزیز پر سخت برہمی کا اظہار کیا، کہا آپ تو زیادہ وقت پاکستان سے باہر ہی گزارتے ہیں، اسلام آباد کیلئے اب تک آپ نے کیا ہی کیا ہے؟، نیت صاف نہ ہو تو کام نہیں ہوتے، میئر صاحب دوبارہ الیکشن میں عوام کے سامنے کیسے جائیں گے؟، دلچسپی نہیں ہے تو آپ عہدے سے الگ ہو جائیں۔

شیخ انصر عزیز بولے 6 ماہ سے بیرون ملک نہیں گیا، عدالت نے مجھے اختیارات دینے کا حکم دیا لیکن حکومت عمل ہی نہیں کررہی، جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ میئر صاحب کیا آپ من و سلویٰ کے انتظار میں ہیں؟ لکیر کے فقیر نہ بنیں، آپ منتخب نمائندے ہیں جرأت دکھائیں، معلوم نہیں آپ عدالت کےعلاوہ کہیں اور جاتے بھی ہیں یا نہیں۔

جسٹس عمر عطاء بندیال نے کہا نعمت اللہ خان اور شجاع الرحمان لیجنڈ میئرز تھے، ہم نے میئرز کو اپنے ہاتھ سے کام کرتے دیکھا ہے نہ کہ لیٹر بازی، سارا اسلام آباد گند سے اٹا پڑا ہے، بتایا جائے 10 ہزار سے زائد عملہ کر کیا رہا ہے؟۔

عدالت نے میئر اسلام آباد کے اختیارات کا معاملہ ایک ماہ میں حل کرنے کا ٹاسک دیتے ہوئے سیکریٹری داخلہ، چیئرمین سی ڈی اے اور میئر اسلام آباد پر مشتمل کمیٹی قائم کردی۔

Tabool ads will show in this div