طیارہ حادثہ،ڈی این اےکےذریعےشناخت میں وقت لگتاہے،گورنرسندھ

تمام باتیں مفروضوں پرمبنی ہیں
May 26, 2020
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2020/05/Governor-Talk-Khi-26-05.mp4"][/video]

گورنرسندھ نے ايک بار پھر کراچی ايئرپورٹ کے اطراف اونچی اونچی عمارتيں بنانے پرايس بی سی اے کو شامل تفتيش کرنے کا مطالبہ کيا ہے۔ انھوں نے وزيراعلیٰ مرادعلی شاہ سے بھی مطالبہ کيا ہے کہ غيرقانونی تعميرات کا نوٹس ليں۔

کراچی میں منگل کو میڈیا سے بات کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل نے بتایا کہ طیارہ حادثے میں متاثر ہونے والے مکانات کی تعمیر میں حکومت معاونت کرے گی۔انھوں نے مزید بتایا کہ املاک کےعلاوہ گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں کا معاوضہ بھی دیا جائے گا۔

گورنر سندھ نے سوال کیا کہ ايئرپورٹ کے اطراف اونچی اونچی عمارتيں کيسے بنيں؟ ايس بی سی اے کو بھی شامل تفتيش کیا جائے اورمرادعلی شاہ غيرقانونی تعميرات کانوٹس ليں،ايس بی سی اے،واٹربورڈ،ريونيو بورڈ سميت ديگرکا قبلہ درست کريں۔

گورنر سندھ نے بتایا کہ حادثےسےمتعلق ابھی رپورٹ نہیں ہے،ابھی قیاس آرائی نہ کریں، تمام باتیں مفروضوں پرمبنی ہیں،پنجاب سے ڈاکٹر ہمایوں اخترکی سربراہی میں میتوں کی شناخت کی جارہی ہے،ڈی این اے کے ذریعے شناخت میں وقت لگتا ہے۔

governor sindh

Tabool ads will show in this div