ضمنی انتخاب کےنتائج سب سےپہلےسماءپر،امیدواروں میں کانٹےکامقابلہ

Pmln Pti Rally Army 1700 Lhr 11-10 لاہور / اوکاڑہ : این اے 122 لاہور، این اے 144 اوکاڑہ اور پی پی 147 لاہور پر ضمنی انتخاب کیلئے پولنگ کا وقت ختم ہوگیا، جس کے بعد ووٹوں کی گنتی شروع کردی گئی ہے، پولنگ اسٹیشن میں موجود ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کر چکے ہیں۔ شیر کی دھاڑ، کپتان کی للکار، اب ہوگا سب کو نتائج کا انتظار، لاہور کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے ایک سو بائیس کا بڑا مقابلہ ہو یا اوکاڑہ کی این اے144 کی نشت، سب کی نظریں ووٹنگ کے نتائج پر جمی ہوئی ہیں، تاہم این اے122 میں کہیں جھگڑے تو کہیں بھنگڑے نظر آرہے ہیں۔
سب سے پہلے، سب سے پہلے نتائج صرف سماء پر، غیر سرکاری غیر حتمی تنائج کے مطابق نتائج مندرجہ ذیل ہیں، جب کہ ابھی ووٹوں کی گنتی جاری ہے اور مکمل نتائج رات گئے تک موصول ہو پائیں گے
حلقہ این اے 122ضمنی انتخاب: رات گیارہ بجے تک موصول ہونے والے نتائج کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقہ این اے ایک سوبائیس کے اب تک موصول ہونے والے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے تحت سب سے اہم سمجھے جانے والے لاہور کے حلقہ این اے 122میں آخری اطلاعات آنے تک قومی اسمبلی کے سابق اسپیکر اور ن لیگ کے سردار ایاز صادق آگے، جب کہ پی ٹی آئی کے امیدوار علیم خان پیچھے ہیں، 229 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج کے مطابق ن لیگ کے امیدوار ایاز صادق 64207ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں، جب کہ کانٹے دار مقابلے میں پی ٹی آئی کے علیم خان 60735 ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ اس سے قبل پولنگ اسٹیشن 61 کے جو نتائج موصول ہوئے تھے، اس کے مطابق ایاز صادق 470 ووٹ لے کر آگے ہیں، جب کہ علیم خان نے اس پولنگ اسٹیشن سے 220 ووٹ ہی مل سکیں۔ پولنگ اسٹيشن62 کے نتائج کے مطابق اياز صادق کے 375،جب کہ پی ٹی آئی کے عليم خان نے صرف 203ووٹ حاصل کیے۔ پولنگ اسٹيشن23 کے نتیجے کے مطابق ن ليگ کے ایاز صادق نے 88ووٹ جب کہ تحريک انصاف کے علیم خان نے صرف 58ووٹ حاصل کیے۔ اس طرح اياز صادق کو 452ووٹوں کی برتری حاصل ہے۔ غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق اب تک مسلم لیگ ن کے ایاز صادق کو 2005 ووٹوں کی برتری حاصل ہے۔ این اے 122 لاہور کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج، 87 پولنگ اسٹیشنوں کا نتیجہ صرف سماء پر، جس کے مطابق ن لیگ کے ایاز صادق 24 ہزار 647 ووٹوں کے ساتھ آگے ہیں، جب کہ پی ٹی آئی کے علیم خان 22 ہزار 56 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں، جس کے بعد اياز صادق کو 2 ہزار 591 ووٹوں کي برتري حاصل ہوگئی ہے۔   :پي پي 147ضمنی انتخاب : رات گیارہ بجے تک موصول ہونے والے نتائج کے مطابق پی پی147لاہور کی نشت کیلئے 78پولنگ اسٹيشنز کے غير سرکاری اور غير حتمی نتائج کے مطابق تحريک انصاف کے شعيب صديقی22680ووٹ لے کر آگے ہیں، جب کہ ن ليگ کے محسن لطيف 20286ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں، اس سے قبل پی پی147لاہور  کے 29 پولنگ اسٹيشنز کے غير سرکاری اور غير حتمی نتائج کے مطابق تحريک انصاف کے شعيب صديقی 7694ووٹوں سے آگے ہیں، جب کہ یہاں ن لیگ کے امیدوار محسن لطيف 6903ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ پہلے نتائج کے مطابق صوبائی اسمبلی نشت پی پی 147 کے ضمنی انتخاب کیلئے پولنگ اسٹيشن 23 کے موصول ہونے والے ئناتج کے مطابق شعيب صديقي 89 ووٹ کے ساتھ آگے تھے۔ جب کہ اسی پولنگ اسٹیشن پر مسلم ليگ ن کے محسن لطيف  صرف 37 ووٹ ہی لے سکے۔ پی پی147ضمنی انتخاب کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتیجہ، پولنگ اسٹيشن23 سے موصول نتائج کے مطابق شعيب صديقی 89ووٹ سے آگے ہیں، جب کہ ن ليگ کے محسن لطيف  37ووٹ سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ پی پی 147 ضمنی انتخاب کے 6پولنگ اسٹیشنز کےغیرسرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق تحريک انصاف کے شعيب  صديقی1902ووٹوں سے آگے ہیں، جب کہ ن ليگ کے محسن لطيف1404ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ این اے144اوکاڑہ/ضمنی انتخاب: اوکاڑہ سے قومی اسمبلی کے حقلہ این اے 144 کی نشت کیلئے آزاد امیدوار چوہدری ریاض نے 83240 ووٹ حاصل کرکے میدان مار لیا، جب کہ مدمقابل ن لیگ کے امیدوار علی عارف 1050 ووٹوں سے دوسرے نمبر پر رہے، دوسری جانب آزاد امیدوار عبدالستار 11ہزار 420ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر آگئے۔ اس حلقے سے کھڑے ہونے والے پی ٹی آئی رہنما اشرف سوہنا کی ضمانت ضبط کرلی گئی۔ اس سے قبل موصول ہونے والے اوکاڑہ کی نشت این اے 144 کے ضمنی انتخاب کے سلسلے میں 56پولنگ اسٹیشنز کےغیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار چوہدری ریاض26678ووٹوں سے آگے ہیں، جب کہ ن لیگ کے علی عارف14152ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں اور پی ٹی آئی کے اشرف سوہنا3666 ووٹوں سے تیسرے نمبر پر رہے۔ اوکاڑہ کے حلقہ این اے 144 میں آج صبح 9 بجے سے لے کر شام 5 بجے تک پولنگ ہوئی۔ اس حلقہ میں مسلم لیگ ن کے عارف علی چوہدری، آزاد امیدوار چوہدری ریاض الحق اور تحریک انصاف کے اشرف سوہنا کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہے، حلقے میں تین لاکھ سولہ ہزار ووٹرز نے حق رائے دہی استعمال کیا۔ - پولنگ اسٹیشن نمبر11کاغیرحتمی،غیرسرکاری نتیجے کے مطابق  آزاد امیدوار چوہدری ریاض الحق213ووٹوں کیساتھ آگے ہیں۔ جب کہ اوکاڑہ کی نشت این اے 144 کیلئے ن لیگ کے علی عارف130ووٹوں کیساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ پولنگ اسٹیشن نمبر35کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار چوہدری ریاض الحق180ووٹوں سے آگے ہیں۔ ن لیگ کے علی عارف96ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ پولنگ اسٹیشن نمبر36کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار چوہدری ریاض الحق200ووٹوں سے آگے ہیں۔ جب کہ ن لیگ کے علی عارف180ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ تاہم پی ٹی آئی کے اشرف سوہنا40ووٹوں سے تیسرے نمبر پر ہیں۔ پولنگ اسٹیشن نمبر75کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجے کے مطابق ن لیگی امیدوار نے حریف کو جھٹکا دے دیا، ن لیگ کے علی عارف467 ووٹوں کیساتھ آگے آگئے۔ جب کہ آزاد امیدوار چوہدری ریاض نے 214ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ اوکاڑہ کے 15 پولنگ اسٹیشنز کےغیرحتمی اور غیرسرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار چوہدری ریاض3900ووٹوں سے آگے ہیں، پندرہ پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق ن لیگ کے علی عارف2700ووٹوں سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ پندرہ پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے اشرف سوہنا1300ووٹوں سے تیسرے نمبر پر ہیں۔ آزاد امیدوار چوہدری ریاض الحق نے 13312 جب کہ مسلم لیگ نواز کے عارف علی چوہدری نے 9301 ووٹ حاصل کئے ہیں۔ اس حلقے کے 210 پولنگ اسٹیشنز میں سے تیس پولنگ اسٹیشنز کے نتائج وصول ہوئے، تقریباً 12 فیصد نتائج موصول ہو چکے ہیں۔ پی ٹی آئی کے اشرف سوہنا اب تک صرف 1300 ووٹ حاصل کر سکے ہیں۔ سماء

ECP

PTI

IMRAN KHAN

AYAZ SADIQ

IMRAN

NA122

@imrankhanpti

Bye Election

ALEEM

PTIOFFICIAL

#lhrbelongstoik

#شیرتےمہرلاسجنااپناوطن

#ballaypethappa

#voteforkhan

@aleemkhan_pti

#voteforbatlahore

#saynotodhandlileague

shadman

#nayapakistan

#لاہورعمران

#voteforteer

ballot

Captaion

Tabool ads will show in this div