اسٹیٹ بینک روزگار اسکیم کا دائرۂ کار اور فنانسنگ حدود بڑھادیں

کاروبار ادارے 50 کروڑ روپے سے زائد حاصل کرسکیں گے
[caption id="attachment_1924531" align="alignnone" width="800"] کراچی میں لاک ڈاؤن کے دوران ایک بند مارکیٹ کا منظر[/caption]

اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے اپنی روزگار اسکیم کا دائرۂ کار اور فنانسگ حدود بڑھادیں، 50 کروڑ روپے کے اوسطاً 3 ماہ کے اجرت کے بل رکھنے والے کاروباری اداروں کو 100 فیصد فائنانس کیا جائے گا۔

اعلامیے کے مطابق بینک دولت پاکستان کو اپنی اعانت روزگار اور ملازمین کو برطرفی سے بچانے کی ری فنانس اسکیم جسے عام طور پر ‘روزگار اسکیم’ کے نام سے جانا جاتا ہے، کے آغاز کے بعد سے مسلسل مختلف متعلقہ فریقوں کی آراء موصول ہورہی ہیں اور اسکیم میں کاروباری اداروں کیلئے مزید سہولتیں پیدا کی جارہی ہیں اور کررونا وائرس کی وباء کے موجودہ منظر نامے میں ملازمین کو برطرفی سے بچانے کیلئے ترغیبات فراہم کی جارہی ہیں۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق اسکیم میں بیشتر تبدیلیاں اس امر کو یقینی بنانے کیلئے کی گئی ہیں کہ اس کے فوائد ایس ایم ایز تک پہنچ سکیں جو بڑی تعداد میں لوگوں کو روزگار مہیا کرتی ہیں۔ اس سلسلے میں حکومت کی حال ہی میں اعلان کردہ رِسک شیئرنگ سہولت اور کارپوریٹ گارنٹی کو بطور ضمانت استعمال کرنے کی اجازت دینے سے توقع ہے کہ بینکوں کو ان ایس ایم ایز کو قرضے دینے کی ترغیب ملے گی جن کے پاس ضمانت کا فقدان ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق اب درمیانے اور بڑے کاروباری اداروں کیلئے ایک اور اقدام کیا گیا ہے، جو خاصی تعداد میں لوگوں کو روزگار فراہم کرتے ہیں، اس اسکیم کے تحت اجرتوں اور تنخواہوں کی ادائیگی کو یقینی بنانے کی خاطر مرکزی بینک نے اپنی پہلے اعلان کردہ ری فنانس حدود کو بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسٹیٹ بینک اب 50 کروڑ روپے تک کے اوسطاً 3 ماہ کے اجرت بل رکھنے والے کاروباری اداروں کی 100 فیصد اجرتوں اور تنخواہوں کو فنانس کرے گا، یہ ادارے اس رقم کو اپریل، مئی اور جون 2020ء کے مہینوں کی اجرتوں اور تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے استعمال کرسکیں گے۔

مرکزی بینک کے مطابق اسی طرح جن کاروباری اداروں کا 3 ماہ کا اجرت بل 50 کروڑ روپے سے زیادہ ہو، اسٹیٹ بینک ان کیلئے 75 فیصد تک زیادہ سے زیادہ ایک ارب روپے تک کی فنانسنگ فراہم کرے گا، اس سے پہلے زیادہ سے زیادہ ساڑھے 37 کروڑ روپے کیلئے 75 فیصد اور زیادہ سے زیادہ 50 کروڑ روپے کیلئے 50 فیصد تک فنانسنگ دستیاب تھی، یہ تبدیلیاں فوری طور پر نافذ العمل ہوں گی۔

اعلامیے کے مطابق ایسے ادارے جو پہلے لاگو حدود کی بناء پر کم فنانسنگ حاصل کرچکے ہیں، وہ اب نظر ثانی شدہ ضوابط کی بنیاد پر اضافی فنانسنگ حاصل کرسکیں گے۔

اس اقدام کے بارے میں مزید تفصیلات اسٹیٹ بینک کی ویب سائٹ پر دستیاب ہے۔

فنانسنگ کی حدود میں اس اضافے کے ہمراہ ضمانت نہ رکھنے والی ایس ایم ایز اور چھوٹے کارپوریٹ اداروں کے لیے حکومت کی رسک شیئرنگ سہولت سے تمام اقسام کے کاروباری اداروں کو اسٹیٹ بینک کی روزگار اسکیم سے فائدہ اٹھانے کا موقع ملے گا اور اس طرح بڑے پیمانے پر برطرفیوں سے بچا جاسکے گا۔

Tabool ads will show in this div