پی آئی اے اور پالپا میں معاملات طے، معاہدے پر دستخط

HDL 1800 P2  09-10

اسلام آباد : سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے کابینہ ڈویژن نے کام کر دکھایا، کئی روز سے جاری پالپا پی آئی اے تنازعہ ختم اور فریقن کے درمیان معاملات طے پاگئے، معاہدے پر دستخط کردیئے گئے، پالپا نے انٹرنیشنل سول ایوی ایشن کو خط لکھنے پر تحریری معافی مانگ لی،

قائمہ کمیٹی برائے کابینہ ڈویژن کی کوششیں رنگ لے آئیں، پالپا اور پی آئی انتظامیہ کے درمیان معاملات طے پاگئے، چیئرمین قائمہ کمیٹی طلحہ محمود اور پالپا کے صدر عامر ہاشمی نے اسلام آباد میں معاہدے پر دستخط کئے۔ جس کے مطابق پی آئی اے اور پالپا نئے ورکنگ ایگریمنٹ جلد تشکیل دیں گے، پائلٹوں کی بھرتی سے قبل بورڈ آف ڈائریکٹرز کی منظوری لی جائیگی جبکہ سنیارٹی کا معاملہ پی آئی اے اور پالپا کے مابین اتفاق سے تحریری طور پر ہو گا۔

معاہدے کے مطابق بورڈ آف ڈائریکٹرز کی منظوری کے بعد نئے پائلٹوں کیلئے پالپا سے مشاورت کی جائے گی، چیئرمین پی آئی اے کے معاون خصوصی کی تقرری کیلئے پالپا 3 پائلٹوں کے نام بھجوائے گی، چیئرمین پی آئی اے کی تجاویز کی منظوری تک موجودہ طریقہ کار اختیار کیا جائے گا۔

معاہدے میں طے پایا ہے کہ پالپا اپنے خلاف مقدمات کی فہرست چیئرمین پی آئی اے اور سی اے اے کو بھجوائے گی، متاثرہ فریق کو پہلے سے طے شدہ اصولوں کے تحت نظر ثانی درخواست کا حق ہوگا، فریقین 2011ء اور 2013ء کے 2 سال کے معاہدے کی کسی بھی نئے معاہدے تک پابندی کریں گے۔

ڈائریکٹر فلائٹ آپریشنز کو ہٹانے کے مطالبے پر قانونی رائے کے بعد فیصلہ ہوگا، اس سے قبل قائمہ کمیٹی کابینہ ڈویژن نے چیئرمین پی آئی اے اور شجاعت عظیم کے نا آنے پر برہمی کا اظہار کیا، پالپا نے انٹرنیشنل سول ایوی ایشن آرگنائزیشن کو خط لکھنے پر تحریری معافی مانگ لی۔ سماء

PM

RAHIM YAR KHAN

air blue

SUKKUR

Flight Delayed

Passengers Disturb

Shaeen Air lines

SHAHEEN

flights late

flights cancelled

PALPA PIA conflict

Tabool ads will show in this div