کراچی میں دو پولیس اہلکاروں کے قتل کا مقدمہ درج

Followup Police Killing khi New PKg 09-10 Tabish

کراچی: کراچی کے علاقے بہادر آباد میں دو پولیس اہلکاروں کے قتل کا مقدمہ انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج کرلیا گیا ہے۔

تفتیشی حکام کے مطاقبق گولیوں کے خول کی فرانزک رپورٹ سے تصدیق ہوگئی کہ پولیس پر حملوں میں کالعدم تنظٰم ملوث ہے۔

بہادر آباد میں گذشتہ روز دہشت گردوں کے حملے میں جاں بحق ہونے والے پولیس اہلکاروں کے قتل کا مقدمہ انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج کیا گیا۔ ہیڈ کانسٹیبل عبدالغفار اور کانسٹیبل پرویز احمد کے قتل کا مقدمہ سب انسپکٹر اشتیاق کی مدعیت میں نیوٹاون تھانے میں درج کرلیا گیا۔

تفتیشی حکام کے مطابق جائے وقوعہ سے نائن ایم ایم پستول کے سات خول ملے تھے، خول کی فرانزک رپورٹ میں تصدیق ہوگئی کہ پولیس اہلکاروں کے قتل میں کالعدم مذہبی تنظیم ملوث ہے۔ اسی نائن ایم ایم پستول سے رواں سال ناظم آباد میں ہیڈ کانسٹیبل غفور اور کانسٹیبل فاروق کے قتل میں استعمال ہوا۔

ناظم آباد میں کانسٹیبل شاہ میر اور عزیز بھٹی میں پیپلز پارٹی کے کارکن احسان دانش کو اسی ہھتیار سے قتل کیا گیا۔ ادھر گلبہار میں گذشتہ روز گلبہار میں ٹریفک پولیس اہلکاروں پرفائرنگ کرکے انہیں زخمی کرنے کا مقدمہ بھی انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج کرلیا گیا۔ ڈی آئی جی ٹریفک امیر شیخ کا کہنا ہے حملہ آوروں کی شناخت ہوگئی ہے۔ سماء

ATC

nazimabad

dig traffic

bahadurabad

two policemen killed

FIR registered

Aziz Bhatti station

Tabool ads will show in this div