بلاول نے ثابت کردیاوہ اشرافیہ کے نمائندے ہیں، شبلی فراز

سندھ حکومت کی نااہلی وفاق پرتھوپنے کی کوشش کی گئی
May 01, 2020

وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے بلاول بھٹو زرداری کے بيان پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی چیئرمین نے ثابت کیا کہ وہ اشرافیہ کے نمائندے ہیں، مزدوروں اور محنت کشوں سے بلاول کا کوئی تعلق نہیں، انہوں نے سندھ حکومت کی نااہلی وفاق پر تھوپنے کی بھونڈی کوشش کی۔

جمعہ کو اسلام آباد میں وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے اپنی پہلی نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قوم کو کرونا وائرس کے بدترین چیلنج کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کیلئے اجتماعی کوششوں کی ضرورت ہے، ملک اقتصادی صورتحال کی وجہ سے مکمل لاک ڈاؤن کا متحمل نہیں ہوسکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ کرونا قومی مسئلہ ہے، اس پر سیاست کرنیوالوں کو قوم معاف نہیں کرے گی، احساس پروگرام، لنگرخانے، پناہ گاہیں، مزدوروں سے وابستگی کا واضح اظہار ہے، 200 ارب کا ریلیف دیہاڑی داروں کی مشکلات کو مدنظر رکھ کر دیا گیا، احساس کیش پروگرام کے تحت 144 ارب روپے نادار طبقات میں تقسیم ہو رہے ہیں۔

وزیر اطلاعات نے کہا ہے کہ حکومت نے اسمارٹ لاک ڈاؤن کا تصور دیا ہے جس کا مقصد یومیہ اجرت پر کام کرنے والوں اور محنت کشوں کو کرونا وائرس کے اثرات سے محفوظ رکھنا ہے، اب سندھ سمیت سب میں اس بارے میں اتفاق پایا جاتا ہے کہ لاک ڈاؤن اور اقتصادی سرگرمیوں میں توازن ہونا چاہئے۔

بلاول بھٹو زرداری کے الزامات کو یکسر مسترد کرتے ہوئے شبلی فراز کا کہنا تھا کہ یہ ملک کی پہلی حکومت ہے جو محنت کشوں کی فلاح و بہبود اور ان کے تحفظ کیلئے عملی اقدامات کررہی ہے، پیپلزپارٹی چیئرمین نے ثابت کیا کہ وہ اشرافیہ کے نمائندے ہیں، مزدوروں اور محنت کشوں سے بلاول کا کوئی تعلق نہیں، انہوں نے سندھ حکومت کی نااہلی وفاق پر تھوپنے کی بھونڈی کوشش کی۔

bilawal bhutto zardari

SHIBLI FARAZ

تبولا

Tabool ads will show in this div

تبولا

Tabool ads will show in this div