وفاقی وزیر مذہبی امور کی اقلیتی کمیشن سے متعلق خبروں کی سختی سے تردید

آئین اور دستور سپریم ہے

وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے اقلیتی کمیشن سے متعلق سوشل میڈیا پر چلنے والی خبروں کی سختی سے تردید کی ہے۔

سما سے گفتگو میں نور الحق قادری کا کہنا تھا کہ حکومت پاکستان ایسی خبروں کی سختی کے ساتھ تردید کرتی ہے کہ قومی اقلیتی کمیشن میں قادیانیوں کی شمولیت کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ قادیانی آئین اور دستور پاکستان کے مطابق غیر مسلم ہیں لہٰذا ان کو کسی بھی کمیشن یا کمیٹی میں بطور مسلم یا غیر مسلم نمائندہ شامل نہیں کیا جا سکتا۔ حکومت پاکستان کا مؤقف واضح ہے کہ کسی بھی گروہ یا جماعت کو اسی صورت آئینی اور دستوری اداروں میں شامل کیا جا سکتا ہے جب وہ آئین اور دستور کو تسلیم کریں۔

وفاقی مذہبی امور کا یہ بھی کہنا تھا کہ قادیانی جماعت آئین اور دستور کو تسلیم کر کے ہی پاکستان کی کسی کمیٹی یا کمیشن میں شامل ہو سکتی ہے۔ پاکستان کا آئین اور دستور سپریم ہے۔ پوری قوم حکومت اسی آئین اور دستور کے تابع ہے۔

پیر نور الحق قادری نے واضح کیا کہ حکومت سے کسی بھی غیر آئینی غیر دستوری عمل کی توقع نہیں کی جانی چاہیے۔

MINORITIES

NOOR UL HAQ QADRI

Tabool ads will show in this div