سول ایوی ایشن اتھارٹی کومارچ میں ساڑھے3ارب روپےسےزائد کا نقصان

مارچ کے پہلے 15 دنوں میں 212 فلائٹس معطل ہوئیں

کرونا وائرس کے باعث پروازوں کی بندش برقرار ہے۔ سول ایوی ایشن اتھارٹی کو مارچ میں ساڑھے تین ارب روپے سے زائد کا نقصان ہوا ہے۔ ملکی برآمدات بھی مارچ 2019 کے مقابلے میں آٹھ اعشاریہ چار چھ  فیصد کم ہوئیں اورایک ارب اسی کروڑ ڈالر رہیں۔

کرونا وائرس کے اثرات سے کوئی بھی شعبہ بچ نہیں سکا۔ ایک ماہ میں سول ایوی ایشن اتھارٹی کو 3 ارب 61 کروڑ روپے سے زائد کا نقصان ہوا ہے۔

رپورٹ کے مطابق مارچ کے پہلے 15 دنوں میں 212 فلائٹس معطل ہوئیں جس سے اتھارٹی کو 45 کروڑ 50 لاکھ روپے کا خسارہ ہوا۔16 سے31 مارچ تک 1469 پروازوں کی منسوخی سے بھی دو سو چھبیس کروڑ کا نقصان پہنچا۔ ایک ماہ میں پاکستان کی فضائی حدود استعمال نہ ہونے سے بھی  سول ایوی ایشن اتھارٹی کو نواسی کروڑ پچاس لاکھ  کا نقصان برداشت کرنا پڑا۔

دوسری طرف عالمی وبا پاکستانی برآمدات کو بھی متاثر کرنے لگی۔ مارچ 2019 کے مقابلے میں مارچ 2020 میں برآمدات میں 8.46 فیصد کمی ہوئی۔

ادارہ شماریات کے مطابق ایک ماہ میں برآمدات کا حجم 1 ارب 80 کروڑ ڈالر رہا۔ مالی سال کے ابتدائی 9 ماہ میں برآمدات میں مجموعی طور پر 2.23 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔مارچ 2019 کے مقابلے میں مارچ 2020 میں تجارتی خسارے میں 30 فیصد سے زیادہ کمی ریکارڈ کی گئی۔

CIVIL AVIATION

Tabool ads will show in this div