جتنا حسد پاکستان میں ہے اتنا کہیں نہیں،خلیل الرحمان

میراڈرامہ مشہورہوا تو لوگوں کو مجھ سے حسد ہوگیا

ڈرامہ رائٹر خلیل الرحمان قمر کا کہنا ہے کہ میں چاہتا ہوں مرنے سے پہلے اس ملک کیلئے کچھ کر جاؤں، جو لوگ مجھ سے حسد کرتے ہیں انہیں کچھ نہیں ملنے والا ہے ۔

میزبان وقار ذکاء کے یوٹیوب چینل پر لائیو سیشن سے بات کرتے ہوئے رائٹر خلیل الرحمان کا کہنا تھا کہ جب تک میں زندہ ہوں مجھے کام کرنا ہے، اگر مجھے لگا کہ میں اس انڈسٹری میں نہیں رہ سکتا کہ تو میں کہیں اور چلا جاؤں گا ۔

انہوں نے کہا کہ میرا ڈرامہ مشہور ہوا تو لوگوں کو مجھ سے حسد شروع ہوگیا، بھارت جیسے ملک میں بھی ایک دوسرے کی قابلیت کو سراہا جاتا ہے لیکن جتنا حسد میں نے پاکستان میں دیکھا ہے اتنا کہیں نہیں ہے یہاں لوگوں کی بے عزتی کی جاتی ہے ۔

خلیل الرحمان قمر کا کہنا تھا کہ وہ نئے لوگ جن کو میں کبھی آڈیشن میں پاس نہ کروں جن سے کبھی میری ملاقات بھی نہیں ہوئی وہ بھی آج کل میرے خلاف باتیں کررہے ہوتے ہیں اور وہ اپنا نقصان کرتے ہیں۔

کرونا وائرس سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ غریب طبقہ پہلے زندگی کے مشکلات سے دوچار ہے ان کے لیے میری دعا ہے اس مشکل وقت میں دوست دشمن سب محفوظ رہیں اور ان کی مشکل آسان ہوجائے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں غیرت کو غلط طریقے سے پیش کیا گیا ہم امریکہ سے امداد لینا اپنا حق سمجھتے ہیں لیکن ہم دوسرے کو کہتے ہیں اپنے پیروں پر کھڑے ہو ۔

یاد رہے کہ میزبان وقار ذکاء نے کورونا وائرس کے بعد عوام کا ڈپریشن کم کرنے کے لیے’ہیڈ فون شو‘کے نام سے ایک منفرد شو متعارف کروایا ہے ۔

KHALIL UR REHMAN QAMAR

Tabool ads will show in this div