حیدرآباد میں سینیٹائزر ناياب ہوگئے

طبی ماہرین نے احتیاط کی ہدایت کی ہے

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/03/RN-HYD-Senetaizers-Shortage-Pkg-18-03-Ayaz.mp4"][/video]

سندھ میں کرونا وائرس کے کیسز میں اضافے کے بعد حیدرآباد میں ماسک اور سینیٹائزر ناياب ہوگئے۔

طبی ماہرین کی جانب سے کرونا وائرس سے محفوظ رہنے کےلیے شہریوں کو احتیاط کی ہدایت کی گئی ہے مگر کہیں چيزيں دستياب نہيں تو کہیں قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں۔

شہریوں کا شکوہ ہے کہ کافی دکانوں کے چکر لگائیں ہیں لیکن سینیٹائزر نہیں مل رہے جبکہ کرونا وائرس کی وجہ سے ماسک خرید رہے ہیں۔

بحران کے حوالے سے دکانداروں کا کہنا ہے کہ جب کمپنیاں ہی نہیں دے رہی تو وہ کہاں سےلائیں۔ پہلے کبھی بھی ایسا نہیں ہوا اب کرونا وائرس کے خوف کی وجہ سے سینیٹائزر مل نہیں رہے جتنا کمپنی بناتی ہے اتنا ہم بیچیں گے۔ اسٹاک بھی ختم ہوگیا ہے۔

Tabool ads will show in this div