کالمز / بلاگ

شریف خاندان کی جلاوطنی میں خفیہ ملاقاتیں،اعتزازاحسن کےاعتراضات

بےنظیربھٹوکی بھی ایسی ملاقاتیں ہوتی تھیں
Mar 15, 2020
[video width="320" height="240" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/03/01-1.mp4"][/video]

پیپلزپارٹی کے رہنما اعتزاز احسن نے نوازشریف اور شہباز شریف کی برطانیہ میں غیرملکی اسٹیبلشمنٹ سے ملاقاتوں پر شکوک کا اظہار کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ بے نظیر بھٹو کی بھی ایسی ملاقاتیں ہوتی تھیں مگر وہ جلاوطنی بیماری کے باعث نہیں تھی۔

پیپلزپارٹی کے رہنما اعتراز احسن نے سما ء کے پروگرام سوال میں بات کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم بےنظیر بھٹو نے اپنی جلا وطنی کے دور پر غیر ملکی اسٹیبلشمنٹ سے ملاقاتیں کی تھیں۔ انھوں نے کہا کہ جب سیاسی رہنما جلا وطن ہوتے ہیں تو اس طرح کی اسٹیبلشمنٹ آکر خود ملتی ہیں۔ انھوں نے مزید کہا کہ افسران اور دیگر لوگ بھی جلا وطنی میں ملاقاتیں کرتے ہیں۔

اعتراز احسن نے مزید کہا کہ بے نظیر بھٹو بیماری کے باعث بیرون ملک میں موجود نہیں تھیں کہ کوئی اور مصروفیت نہ ہو، جب کوئی سیاسی رہنما بیماری کا جواز لے کر گیا ہو اور پھر وہاں  اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ملاقاتیں کررہا ہو، پھر شک و شبہ ہوتا ہے۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ بےنظیر بھٹو کا سیاسی کیرئیر کھلا تھا۔ انھوں نے میڈیکل رپورٹ پر مبنی جلا وطنی اختیار نہیں کی تھی۔ لیب رپورٹس پر اس لیے شک پڑتا ہے کیوں کہ شریف خاندان کی آج کل سرگرمیاں مشکوک ہیں۔

benazir bhutto

Tabool ads will show in this div