ڈائریکٹر بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کی ریکارڈنگ سامنے آگئی

گروپ چیٹ میں کھلی باتیں

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹر عادل عمر کی مختلف ریکارڈنگز سامنے آگئیں جن میں وہ عملے سے منتھلی اور بچ بچانے کی باتیں کر رہے ہیں۔

کراچی میں غیر قانونی تعمیرات کی سرپرستی ایس بی سی اے افسران کرتے ہیں۔ اب یہ دعوی نہیں بلکہ سچ بات ہے جس کا اظہار خود ایس بی سی اے کے آفیسر عادل عمر کررہے ہیں۔ عادل عمر ماتحت آفیسر کو بول رہے ہیں، افسر کی کہانی بھی بتاؤں جو ماہانہ اکسٹھ لاکھ روپے کماتا ہے۔

معطلی کا شکار ایک اور ایس بی سی اے آفیسر راشد ناریجو نے بھی خوب بھانڈا پھوڑا کہ سب کو سامنے بتاؤں گا کہ میں نے اپنے ہاتھوں سے اتنی رقم سرفراز صاحب کو دی ہے۔

ایس بی سی اے کے ذرائع کہتے ہیں اس ادارے میں کرپشن کی کہانی ہر زبان پر موجود ہے جس کا کھل اظہار سامنے آرہا ہے۔ سابق ڈی جی منظور قادر کے دور سے ایک سسٹم کا راج ہے جسے کراچی سے غیر قانونی تعمیرات کرواکے ماہانہ پچیس کروڑ روپے تک ادا کیے جاتے ہیں۔

اس کے بدلے میں افسران کو غیر قانونی تعمیرات کروانے کیلئے مرضی کی پوسٹنگ اور اختیارات دیئے جاتے ہیں۔

SBCA

Tabool ads will show in this div