کراچی میں1995کی سرکلرریلوےبحال کرنےکاحکم،سپریم کورٹ

سی پیک میں سرکلرریلوےکوشامل کرنےکی تجویزمسترد

چیف جسٹس آف پاکستان نے کراچی میں 1995 کی سرکلر ریلوے بحال کرنے کا حکم دے ديا۔سی پیک میں سرکلر ریلوے کو شامل کرنےکی تجویز مسترد کردی۔

جمعہ کو سپریم کورٹ میں کراچی سرکلر ريلوے اور ٹرانسپورٹ بحالی کيس کی سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے1995 کی سرکلر ریلوے بحال کرنے کا حکم دیا اور سی پیک ميں سرکلر ریلوے کو شامل کرنے کی تجویز مسترد کردی۔ عدالت نے حکم دیا کہ سرکلر ریلوے کی راہ میں آنے والی تمام رکاوٹیں ختم کردی جائیں۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ کراچی میں گرین لائن اور دیگر منصوبوں کيلئےانڈر پاسز اور فلائی اوورز بنائے جائیں، گرین اور اورنج لائن منصوبے بھی جاری رکھے جائیں۔

چیف جسٹس نے ہدایت کی کہ سرکلر ریلوے کی بحالی کيلئےتمام وسائل بروئے کارلائے جائیں، ریلوے وفاقی وزارت ہے فنڈز بھی وفاق فراہم کرے گا۔

سپریم کورٹ نے کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کا مکمل منصوبہ اور شیڈول 26 مارچ کو طلب کرلیا۔

واضح رہے کہ کراچی سرکلرريلوےکی بحالی کیلیے دو ہفتے قبل سپریم کورٹ نے 6ماہ کی ڈیڈ لائن دی تھی۔ سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ تاخیرپرمتعلقہ ادارےسنگین نتائج کیلیےتیاررہیں۔ سپریم کورٹ نے کراچی سرکلر ریلوے ے سے متعلق 16صفحات کا تحريری حکم نامہ جاری کیا اور ريلوے اراضی پرفوری قبضےختم کروانےکاحکم دیا۔

Karachi Circular Railway

Tabool ads will show in this div