عزیز میمن کے قتل کی تفتیش وفاقی ایجنسی کرے، فوادچوہدری

صحافی کی لاش 16فروری کو نہر سے ملی
Mar 05, 2020

وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری کہتے ہیں کہ سندھی صحافی عزیز میمن کے قتل کی تفتیش وفاقی ایجنسی کو کرنی چاہیئے۔

جمعرات 5 مارچ کو اپنی ٹویٹ میں فواد چوہدری نے کہا کہ میں نے پہلے دن ہی شیریں مزاری اور اسپیکر قومی اسمبلی کو درخواست کی تھی کہ عزیز میمن کے قتل کی تفتیش وفاقی ایجنسی کو کرنی چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ مقتول خود قاتل بتا کر گیا ہے ہم ایسے کیسے خاموش ہو جائیں۔ سندھ کے کرتا دھرتا اتنی آسانی سے اس قتل سے نہیں بچ سکتے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ اس قتل کے پس منظر حقائق کی روشنی میں سندھ پولیس اس کی تفتیش کر ہی نہیں سکتی کیونکہ سندھ پولیس نے جس طرح قتل کو طبعی موت قرار دیا وہ قابل مذمت ہے۔

نوشہرو فيروز کے سینئر صحافی عزیز میمن کی لاش 16 فروری کو محراب پور کے قريب نہر سے ملی تھی۔ پوليس کے مطابق کے ٹی این چینل کے صحافی کے گلے میں کیبل کی تار پھنسی ہوئی تھی۔

 قتل کا مقدمہ محراب پور تھانے میں درج کرليا گيا ہے جس میں کيمرا مين سميت 5 ملزمان نامزد ہیں۔ 

Aziz Memon