کالمز / بلاگ

پاکستان میں ہرکسی کوماسک پہننےکی ضرورت نہیں،ظفرمرزا

پاکستان میں کرونافوراً ایسےاثرنہیں کرے گاجیسےدوسرےممالک میں ہوا
Mar 11, 2020
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/03/SAWAALCLIP01-01Mar.mp4"][/video]

معاون خصوصی برائے صحت طفر مرزا نے کہا ہے کہ پاکستان میں ہرنزلہ زکام کامریض کرونا کا مریض نہیں ہے،پاکستان میں ہر کسی کو ماسک پہننے کی ضرورت نہیں ہے،اس بیماری میں مریض98فیصدسےزیادہ ٹھیک ہوجاتے ہیں۔

اتوار کو سماء کے پروگرام''سوال'' میں بات کرتے ہوئے معاون خصوصی برائے صحت ظفرمرزا نے بتایا کہ پاکستان میں کرونا وائرس فوراً ایسے اثر نہیں کرے گاجیسےدوسرےممالک میں ہوا،پاکستانیوں کےوسیع ترمفاد میں چین کی پابندیوں پرعمل کیا جس سےپاکستان میں اس وائرس کے پھیلاؤ میں کمی ہوئی۔

ظفرمرزا نے تصدیق کی کہ چین میں پاکستان کے7طلبہ میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی 6طلبہ اس وائرس سےمکمل طورپرصحت یاب ہوچکے ہیں ،اس بیماری میں 98فیصدسےزیادہ ٹھیک ہوجاتے ہیں۔

ظفرمرزا نے مزید بتایا کہ پاکستان میں متاثرچاروں مریضوں کی طبیعت بہترہورہی ہے،متاثرمریض جلد مکمل صحت یاب ہوجائیں گے، متاثرہ افراد کےتمام اہل اخانہ کوچیک کرلیاگیاہے،جن لوگوں سےوہ ملتےرہےان کی تفصیلی معلومات لی ہیں،سینکڑوں لوگوں کورابطے کرچکے ہیں،کوشش ہےکہ جتنے لوگوں سےوہ ملےہیں ان کی اسکریننگ کی جائیں۔

ظفرمرزا نے یہ بھی بتایا کہ چین کی حکومت کے ساتھ بہت قریبی رابطےہیں،چھٹیوں کےبعدکوئی بھی چینی شہری 14دن کی اسکریننگ کےبغیرپاکستان نہیں آئےگا۔

معاون خصوصی نے بتایا کہ پاکستان اورایران کےدرمیان فضائی آپریشن معطل کیاہواہے،ایک حکمت عملی کےتحت ہم ساراکام کررہےہیں،چین میں پاکستانی طلبہ ذہنی دباؤمیں ہیں،کوشش ہے کہ ان طلبہ کوہرسہولیات فراہم کریں، جس صوبےمیں وہ ہیں وہاں سےکوئی باہرآتاہےنہ وہاں جاتاہے،چین نےبروقت جوپابندیاں لگائیں وہ نہ ہوتی تولاکھوں لوگ متاثرہوتے۔

Tabool ads will show in this div