نومولود بچوں کی ہلاکت کےذمہ دار ڈاکٹرکی بحالی کاحکم معطل

محکمہ صحت کی اپیل کی لاہور رجسٹری میں سماعت
Feb 14, 2020
فوٹو: فائل
فوٹو: فائل
[caption id="attachment_1843947" align="alignnone" width="800"] فوٹو: فائل[/caption]

سپریم کورٹ نے سروسز اسپتال لاہور میں 7 نومولود بچوں کی ہلاکت کے ذمہ دار ڈاکٹر کی بحالی کا حکم معطل کر دیا۔

جمعہ 14 فروری کو چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی فل بینچ نے محکمہ صحت کی اپیل کی لاہور رجسٹری ميں سماعت کی۔

اپيل ميں سروسز اسپتال میں 7 نومولود بچوں کی ہلاکت کے ذمہ دار ڈاکٹر کی بحالی کے ٹربيونل کے فیصلے کو چیلنج کیا گیا۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ بچوں کی ہلاکت کے ذمہ داروں کے تعین کا کیا بنا؟ ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے بتایا کہ انکوائری کمیٹی نے ڈاکٹر سعید کو جبری ریٹائرڈ کر دیا تھا لیکن پنجاب سروس ٹربیونل نے ایک سال کی انکریمنٹ روک کر نوکری پر بحال کر دیا۔ ڈاکٹر سعید اے سی مینٹیننس کے انچارج تھے۔

فل بینچ نے پنجاب حکومت کی اپیل سماعت کےلیے منظور کرتے ہوئے ڈاکٹر سعيد کی بحالی کا حکم معطل کر ديا اور فریقین کو بحث کے ليے طلب کر ليا۔

Tabool ads will show in this div