موجودہ صورتحال ميں مڈٹرم اليکشن ہی واحد حل ہے،رانا ثناء

فضل الرحمٰن کو منا کرمشترکہ لائحہ عمل بنائيں گے
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/02/Rana-Sana-Case-Lhr-Sot-08-02.mp4"][/video]

مسلم لیگ نون کے رہنماء رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال ميں مڈٹرم اليکشن ہی واحد حل ہے، حکومت کے ساتھ رہے تو تمام اتحادی بھی ڈوب جائيں گے۔

ہفتے کو لاہور میں رانا ثناءاللہ کے خلاف انسداد منشیات کی عدالت میں کیس کی سماعت ہوئی۔ رانا ثنا کے وکیل نے کہا کہ کیس کو بھی عام کیسوں کی طرح چلایا جائے،پراسیکیوٹر کا کہنا تھا کہ ہم شہادت ریکارڈ کرانا چاہتے ہیں ،اس لیے جلد ٹرائل کی استدعا کی ہے، عدالت نے ملزمان کی حاضری لگا کر سماعت ملتوی کردی۔

عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ واٹس ایپ کے ذریعے جج کا تبادلہ کردیا گیا،موجودہ جج بھی دیانت دار ہیں تاہم ہمیں مطلوبہ معلومات فراہم نہیں کی جارہی ہیں، پی ٹی آئی مشرف کے فیصلے پر وویلا مچارہی تھی،ہمیں روزانہ عدالتوں سے انصاف مل رہا ہے۔

مریم نوازسے متعلق انھوں نے کہا کہ حکومت کو مريم نواز کے پيش ہونے پر ابہام ہے توعدالت سے رجوع کرے،ہماری طرف سے کوئی خاموشی والی بات نہيں، مريم نوازکے خلاف جھوٹا پروپيگنڈہ کيا گيا،مریم نواز کا لندن میں ان کے والد کے پاس ہونا ان کا حق ہے۔

مبینہ منشیات اسمگلنگ کیس سے متعلق رانا ثنا اللہ نے کہا کہ حکومت اتنی نفرتیں پیدا کررہی ہے کہ ازالہ نہیں ہوسکے گا،جھوٹے مقدمےمیں قیدتمام لوگ رہاہوں گے۔ راناثناءاللہ نے مزید کہا کہ شہریارآفریدی نے کہا کہ ایک آدمی کوگرفتارکرکےمجھ تک پہنچے،جس آدمی کےذریعےمجھ تک پہنچےاسےپیش کریں، ہميں وہ ويڈيو اور بندے لاکرديں يا معافی مانگيں۔

ملک کی سیاسی صورتحال پرراناثںاءاللہ کا کہنا تھا کہ ہم دوبارہ الیکشن چاہتے ہیں، موجودہ صورتحال ميں مڈٹرم اليکشن ہی واحد حل ہے، اتحاديوں کو چھوڑيں،عوام بھی حکومت سے ناراض ہيں،اتحادی جتنی جلدی کشتی سے چھلانگ لگا ديں اتنا بہتر ہے، حکومت کے ساتھ رہے تو تمام اتحادی بھی ڈوب جائيں گے، فضل الرحمان ہم سے ناراض ہيں، فضل الرحمٰن کو منا کرمشترکہ لائحہ عمل بنائيں گے۔

rana sana

Tabool ads will show in this div