سیالکوٹ، نجی اسپتال میں نرس کی پراسرار موت

مقدمہ درج

پنجاب کے ضلع سیالکوٹ کے نجی اسپتال میں زیرتربیت نرس پر اسرار طور پر  چھت سے گر کر جاں بحق ہوگئی۔ پولیس نے والد کی مدعیت میں قتل کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی۔

سیالکوٹ کی تحصیل پسرور کے علاقہ کلاسوالہ روڈ پر واقع نجی اسپتال میں زیر تربیت اسماء نامی 18 سالہ نرس پرسرار طور پر  چھت سے گر کر جاں بحق ہوگئی جس کی لاش زیر تعمیر لفٹ کی خالی جگہ سے ملی۔

نرس کے والد کا کہنا ہے کہ اس کی بیٹی کو قتل کیا گیا ہے جبکہ اسپتال انتظامیہ کا موقف ہے کہ اسماء دیگر نرسز کے ساتھ تیسرے فلور پر رہائش پزیر تھی۔ ڈیوٹی ختم کرنے کے بعد چھت پر بنے ہاسٹل میں چلی گئی تھی۔ وہاں سے گرگئی ہے۔

والد نے واقعہ کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ اس کی بیٹی 4 ماہ سے پسرور کے النور اسپتال میں نرسنگ کر رہی تھیں اور اکثر تاخیر ہوجانے پر اسپتال میں ہی رک جاتی تھیں۔ گزشتہ روز 6 اور 7 فروری کی درمیانی شب وہ اسپتال میں رک گئیں۔ صبح اپنی بیٹی کیلئے ناشتہ لیکر اسپتال پہنچا تو بتایا گیا کہ آپ کی بیٹی کی لاش لفٹ کی جگہ پر پڑی ہے۔

پولیس نے والد کی مدعیت میں نامعلوم ملزمان کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔

NURSE

Tabool ads will show in this div