Uncategorized

سانحہ منیٰ؛ شہید پاکستانیوں تعداد 22 ہوگئی

MISSING PAKISTANI NEW PKG 27-09

[video width="640" height="360" mp4="http://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2015/09/MISSING-PAKISTANI-NEW-PKG-27-09.mp4"][/video]

منیٰ : سانحہ منیٰ کے شہدا کی تعداد 769 ہوگئی، شہید ہونے والوں میں 22 پاکستانی بھی شامل ہیں جبکہ 150 سے زائد پاکستانی حاجیوں کا تاحال کچھ پتا نہیں چل سکا، سماء پھر بنا ہے دکھی خاندانوں کا سہارا منیٰ ميں لاپتا پاکستانيوں کے اہل خانہ مسلسل اپنے پياروں کی خيريت جاننے کیلئے سماء سے رابطہ کر رہے ہيں۔

سانحہ منیٰ میں مزید 3 پاکستانیوں کی شہادت کی تصدیق ہوگئی، تلمیز احمد اور افتخار احمد کا تعلق کراچی سے ہے، خاندان ذرائع نے پشاور کے شیر افضل کی شہادت کی بھی تصدیق کی ہے۔

ڈی جی حج ابو عاکف نے سماء سے گفتگو کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ 150 لاپتہ پاکستانی مل گئے، کسی زخمی پاکستانی حاجی کی حالت تشویشناک نہیں، 23 زخمیوں کو اسپتال سے فارغ کردیا گیا، ویب سائٹ مسلسل اپ ڈیٹ کی جارہی ہے۔

سانحہ منیٰ کے بعد سیکڑوں پاکستانی تاحال لاپتہ ہیں، منیٰ کے ميدان ميں رمی کيلئے جانے والے کہاں کھوگئے، عزیزوں رشتے داروں کو اپنے پیاروں کی تلاش ہے، لاپتا پاکستانیوں کے اہلخانہ سماء سے رابطہ کرکے تلاش میں مدد کی اپیل کررہے ہیں۔

باوثوق ذرائع کے مطابق منیٰ سانحے میں شہید ہونے والے پاکستانیوں کے نام یہ ہیں۔

لاہور سے حاجی میاں ریاض، ملتان سے اسد مرتضیٰ گیلانی، عزیزہ مائی، ، جھنگ سے سراج احمد، ایبٹ آباد کی شاہین، بلقین، شیر خان اور زاہد گل۔

کراچی سے حفصہ، شعیب، زرین قاسم، تلمیز احمد، افتخار احمد، میرپور خاص کی سیدہ نرجس شہناز، دالبندین کی بی بی زینب۔

پشاور سے حاجی شیر افضل  جبکہ  محمود ارشد، رشیداں بی بی، ڈاکٹر امیرعلی لاشاری، عبدالرحمان ولد اسماعیل، شہناز قمر، گل شہناز ولد غلام ربانی بھی شہداء میں شامل ہیں۔

سعودی عرب ميں پاکستانی سفير منظور الحق سے جب بات ہوئی تو وہ آئيں بائيں شائيں کرنے لگے، ان کا کہنا ہے کہ حج کے دوران لاپتہ ہونا معمول کی بات ہے، پاکستانی سفير نے 18 ہم وطنوں کی شہادت کی بھی تصديق کردی۔

دوسری جانب وزیراعظم نواز شریف نے بھی لاپتہ حاجیوں کی تلاش کیلئے ہر ممکن اقدامات کی ہدایت کی ہے۔ سماء

RAHIM YAR KHAN

martyred

#MinaStampede

Mina tragedy

316 pakistani missing

samreen

eight years

tauseef iftikhar

dr ameer lashari

Tabool ads will show in this div