جامعہ کراچی،تحقیقاتی شعبے میں کٹ فلاورز کی کمرشل فارمنگ شروع

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
کراچی : ملک میں بائیو ٹیکنالوجی کو فروغ دے کر اس سے پیدا کیے گئے پودوں ، سبزیوں اور پھولوں کی برآمدات سے کثیر زر مبادلہ حاصل کیا جاسکتا ہے۔


اس سلسلے میں جامعہ کراچی میں قائم اورچڈ فلوور فارمنگ پلانٹ کئی برسوں سے کام کر رہا ہے۔


جامعہ کراچی میں قائم آرکیٹ فلاورز فارمنگ پلانٹ ہے جو اپنی مدد آپ کے تحت گزشتہ کئی برسوں سے کام کررہا ہے۔


ملک میں یہ شعبہ ہمیشہ ہی عدم توجہ کا شکار رہا ہے۔ جب کہ بھارت، سری لنکا، سنگاپور سمیت ایشیا اور یورپ کے بعض ممالک اس شعبے سے اپنی معیشت کو مستحکم کرنے میں مصروف ہیں ۔


پوری دنیا میں صرف آرکیٹ فلاورز کی خرید و فروخت سے دو ہزارملین امریکی ڈالر کا کاروبار ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق سندھ اور بلوچستان کی ساحلی پٹی کٹ فلاور کی پیداوار کیلیے انتہائی موزوں ہے اور اس کی پیداوار سے ہزاروں ملین ڈالرز کا ذرمبادلہ کمایا جاسکتا ہے.


جامعہ کراچی کے سائنسی و تحقیقی ادارے بین الاقومی مرکزشعبہ  بائیو ٹیکنالوجی نے پہلی بار کٹ فلاورز کی کمرشل فارمنگ شروع کی ہے ۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ اگربائیولوجیکل کو حکومتی سرپرستی حاصل ہوجائے تو پاکستان کاٹن سے زیادہ ذرمبادلہ کٹ فلاورز سے کما سکتا ہے۔
ملکی معاشی بدحالی کے خاتمے کے لئے بائیو ٹیکنالوجی انتہائی اہم کردار ادا کرسکتی ہے ۔ پاکستانی آرکیٹ کی برآمد کثیر ذرمبادلہ کا ذریعہ بن سکتی ہے ۔ سماء

میں

کی

شروع

chechnya

haiti

check

Tabool ads will show in this div