گورنر بے اختیار، ایک چپراسی کو نہیں ہٹاسکتے، سعید غنی

سندھ سے سوتیلی ماں جیساسلوک کیا جارہاہے، صوبائی وزیر
Feb 01, 2020

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/02/Saeed-Ghani-KHi-Montage-01-02-REms.mp4"][/video]

سعید غنی کا کہنا ہے کہ سندھ سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا جارہا ہے، گورنر اتنے بے اختیار ہیں کہ ایک چپڑاسی کا بوریا بستر گول نہیں کرسکتے۔

وزير اطلاعات سندھ سعید غنی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر کو علامتی عہدہ قرار ديتے ہوئے بے اختيار قرار دے دیا، ان کا کہنا ہے کہ موجودہ آئین کے تحت گورنر کے پاس کوئی اختیر نہیں، عمران اسماعيل گورنر ہاؤس کے چپڑاسی کا بوريا بستر گول نہيں کرسکتے ، حکومت تو دور کی بات ہے۔

وفاق کی جانب سے نيا آئی جی تعينات نہ کرنے پر سعيد غنی نے کہا سندھ چونکہ سوتيلا ہے، اِس لئے کليم امام انگوٹھا دکھا رہے ہيں۔

وفاق اور سندھ کے درمیان آئی جی کی تبدیلی پر رسہ کشی جاری ہے، وزیراعلیٰ مراد علی شاہ نے کلیم امام کو نااہل افسر قرار دیا تھا، سندھ حکومت آئی جی سندھ کیلئے کئی نام وفاق کو بھیج چکی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے بھی آئی جی سندھ کلیم امام کو اسلام آباد طلب کرکے ملاقات کی، جس میں سندھ کے حالات اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم کا کہنا ہے کہ سندھ میں جھوٹے مقدمات درج ہوتے تھے، ایسا آئی جی لائیں گے جو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال نہ ہو۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ نے وزیراعظم کو تیسرا خط لکھ دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ آئی جی کلیم امام کا رویہ نفرتوں کا باعث بن رہا ہے، فوراً عہدے سے ہٹایا جائے۔

IG sindh