پیاراوردعاؤں کا شکریہ: مداحوں کے نام ہمایوں سعید کاپیغام

یہ صرف میری یاٹیم کی کامیابی نہیں

بے انتہا مقبولیت سمیٹنے والے ڈرامہ سیریل ’’میرے پاس تم ہو‘‘ کے مرکزی کردار دانش (ہمایوں سعید ) نے اپنی اداکاری کو بیحد پسند کرنے پرمداحوں کا شکریہ ادا کیا ہے۔

انسٹا گرام پوسٹ میں اداکار کا کہنا ہے کہ اس ڈرامے کی کامیابی سے جو دعائیں ملیں، اس سے قبل اپنے پورے کیرئیر کے دوران کبھی نہیں ملی تھیں۔

اس حوالے اپنی پوسٹ میں ہمایوں نے لکھا ، گزشتہ چند ماہ کے دوران ملنے والے پیاراورتعریف کا شکریہ، سب سے بڑھ کر آپ کی دعاؤں کا شکریہ۔ ’’میرے پاس تم ہو‘‘ کی کامیابی کے حوالے سے مجھےجو دعائیں موصول ہوئیں ، اس سے قبل کبھی نہیں ہوئی تھیں۔

اداکارنے اس حوالے سے پاکستان سمیت بیرون ممالک بھی یہ ڈرامہ دیکھنے والے تمام ناظرین کا شکریہ ادا کیا جن کی بیحد پسندیدگی نے اس ڈرامے کو بلاک بسٹربنایا۔

ہمایوں سعید نے مزید لکھا ، یہ صرف میری یا میری ٹیم کی کامیابی نہیں ہے بلکہ ہماری پوری ڈرامہ اور فلم انڈسٹری کی کامیابی ہے۔

اس سے قبل مہوش کا کردار ادا کرنے والی عائزہ خان اور شہوار (عدنان صدیقی ) بھی ڈرامے کی پسندیدگی اور اپنے کام کو سراہنے پر مداحوں کا شکریہ ادا کر چکے ہیں۔

بے انتہا پسند کیے جانے والے اس ڈرامے کی کہانی دراصل مادہ پرست عورت اورمرد کی بیوفائی پر مبنی تھی ۔ ڈرامے کی ہرنئی قسط نشر ہوتے ہی سوشل میڈیا پروائرل ہوجاتی اور صارفین اگلی قسط نشر ہونے تک دلچسپ میمزبناتے اور تبصرے کرتے ۔ مصنف نے ایک انٹرویومیں کہا تھا کہ یہ ڈرامہ لکھتے ہوئے میرے ہاتھ کانپے، آخری سین لکھتے ہوئے آنسو بہہ رہے تھے۔ یہ بہت سارے مردوں کی سچی کہانی ہے جن کا میں نے مشاہدہ کیا۔

اس ڈرامے کے موضوع سے معاشرے کے مختلف طبقوں میں جس بحث کا آغاز ہوچکا ہے، اس کی گونج شاید بہت دنوں تک رہے گی۔ معاشرے کا ایک طبقہ اس ڈرامے کے مصنف خلیل الرحمان قمر کے عورت سے متعلق خیالات کی سخت مخالفت کرتے ہوئے ان سے نظریاتی اختلاف رکھتا ہے ،اسی وجہ سے انہیں بہت سے حلقوں سے تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑرہا ہے، گو کہ خلیل الرحمان قمر یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ وہ عورت کو مرد سے بہترسمجھتے ہیں لیکن الفاظ کا چناؤ کہیں نہ کہیں ان کیلئے مشکل کھڑی کردیتا ہے۔

MERAY PASS TUM HO

Tabool ads will show in this div