اسرائیلی شہریوں کو سعودی عرب آنے کی اجازت مل گئی

کاروبار کرسکیں گے
Jan 27, 2020
فائل فوٹو: خانہ کعبہ
فائل فوٹو: خانہ کعبہ

اسرائیل کی حکومت نے کہا ہے کہ سعودی عرب کی باشاہت نے اسرائیلی شہریوں کو سفر کرنے کی اجازت دے دی ہے۔ مبصرین کے مطابق مذکورہ اجازت اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان خاموش مگر مضبوط ہوتے تعلقات کی ایک تازہ مثال ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے نے پیر کی رات ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ اس بات کا اعلان اسرائیل کے وزیر داخلہ نے مقبوضہ بیت المقدس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا۔ اس اعلان کے بعد اسرائیل کے باشندے جب چاہیں سیاحت اور کاروباری سمیت کسی بھی مقصد کیلئے سعودی عرب کا سفر کرسکتے ہیں۔

اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان باقاعدہ طور پر سفارتی تعلقات قائم نہیں ہیں۔ لیکن دونوں ممالک کے درمیان ایران سے متعلق پالیسی پر اتفاق پایا جاتا ہے۔ دونوں ہی ایران کو اپنا دشمن اور سمجھتے ہیں اور خطے میں ایران کا اثر و رسوخ اور طاقت محدود رکھنا چاہتے ہیں۔

یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب امریکا آئندہ چند روز میں مشرقِ وسطی میں امن کے قیام کے لیے اپنے نئے منصوبے کا اعلان کرنے والا ہے۔ مبصرین کے مطابق اِس کے لیے امریکا کو سعودی عرب کی حمایت بھی درکار ہے۔

مقبوضہ بیت المقدس میں موجود صحافی ہریندر مشرا نے بی بی سی کو بتایا کہ اسرائیلی شہری پہلے سے ہی سعودی عرب جا رہے ہیں لیکن اِن میں سے جو مسلمان ہیں انہیں اسرائیل میں قائم وقف بورڈ کی جانب سے خصوصی دستاویزات کی ضرورت ہوتی ہے۔

صحافی کے مطابق اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان سفارتی تعلقات نہیں ہیں۔ اِس لیے اب تک یہ ہوتا رہا ہے کہ اگر کسی مسلمان اسرائیلی نے سعودی عرب جانا ہے تو وہ اردن یا مصر کے ذریعے جاتا ہے۔ اِن افراد کے پاسپورٹ پر کوئی ویزا نہیں ہوتا بلکہ اِن کے پاس اسرائیلی وقف بورڈ کی جانب سے جاری کردہ خصوصی دستاویزات ہوتے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ نئی اجازت کے بعد سعودی عرب جانے کا راستہ تو اب بھی یہی ہو گا لیکن اب یہ افراد اپنے اسرائیلی پاسپورٹ پر سفر کر سکیں گے اور اسرائیلی شہری کو سعودی عرب پہچنے پر ویزا دے دیا جائے گا اور پاسپورٹ پر سعودی ویزے کی مہر سے اسرائیلی حکومت کو کوئی اعتراض بھی نہیں ہو گا۔

دوسری جانب سعودی کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے کہا ہے کہ ہماری پالیسی واضح اور دو ٹوک ہے۔ ہمارے اسرائیل کے ساتھ تعلقات نہیں ہیں اور اسرائیلی شہریوں کا سعودی عرب میں خیرمقدم نہیں کیا جائے گا۔

Tabool ads will show in this div