دریائےسندھ میں پانی کم ہونے پر نایاب ڈولفن مرنے لگیں

علاقہ مکینوں کا اظہار تشویش

دریائے سندھ میں پانی کی سطح کم ہونے کے باعث نایاب ڈولفن کی نسل خطرے سے دوچار ہوگئی ہے۔ کندھ کوٹ میں ایک ڈولفن ہلاک جبکہ سکھر میں ایک کو ریسکیو کرلیا گیا۔

کندھ کوٹ سے سماء کے نمائندے کے مطابق غوثپور کے علاقہ کچے میں دریائے سندھ کے کنارے نایاب نسل کی ڈولفن مردہ حالت میں ملی ہے۔

مقامی افراد کا کہنا ہے کہ  وہ جلانے کیلئے لکڑیاں کاٹنے دریاء کے کنارے گئے جہاں انہوں نے نابینا انڈس دولفن کو دیکھا۔ جب اس کو نکال کر کنارے تک لائے تو وہ مردہ حالت میں تھی۔

نایاب نسل کی نابیں انڈس ڈولفن کی ہلاکت پر سماجی حلقوں نے تشویش کا اظہار کیا ہے۔

دوسری جانب سکھر میں بھی ڈولفن بھٹک کر کنارے پر آگئی۔ وائلڈ لائف کے ڈپٹی کنزویٹر عدنان حماد کے مطابق دریائے سندھ سے بھٹکی ہوئی نایاب نسل کی ڈولفِن کو روھڑی کینال سے  ریسکیو کرلیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریسکیو کردہ ڈولفِن کا قد سات فوٹ چار انچ ہے جبکہ عمر بیس سے پچیس سال اور وزن 83 کلو ہے۔ ڈولفِن کو نیوی پارک کے قریب دریا میں چھوڑا گیا۔

River Sindh

Tabool ads will show in this div