بڈھ بیر حملے کا ماسٹر مائنڈ افغانستان میں ہے، وزیرداخلہ

NISAR ON PTI SOT 23-08 اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا کہنا ہے کہ پاکستان میں کھڑے ہو کر افغانستان میں آپریشن ہو سکتا ہے، مگر اس سے دونوں ملکوں کے تعلقات مزید خراب ہونگے, انہوں نے انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ بڈھ بیر حملے میں ملوث دہشت گرد جہاں ٹھہرے اس کا بھی پتا چل گیا ہے، حملے کے ماسٹر مائنڈ کا تعلق افغانستان سے ہے۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ سانحہ بڈھ بیر حملے کے ماسٹر مائنڈ کا تعلق افغانستان سے ہے جس کا سراغ لگا لیا گیا ہے اور اس کی تلاش جاری ہے۔ وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ بڈھ بیر میں تیرہ نہیں چودہ دہشت گرد مارے گئے تھے جن میں سے پانچ کی شناخت ہو گئی، تاہم نو حملہ آوروں کی شناخت نہیں ہو سکی۔ وزیر داخلہ کا مزید کہنا تھا کہ افغان حکام کو یہ شواہد دیں گے کہ سرغنہ افغانستان میں تھا، ہم نے اپنی طرف کو کنٹرول کیا ہے، جنگجو دوسری طرف ہیں، وزیرداخلہ نے کہا کہ ادھر کوئی چھینک مارتا ہے تو الزام پاکستان پر لگتا ہے، بُرد باری کا مظاہرہ کرنا چاہیے، کسی دوسرے پر الزام نہیں لگانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کا نہ ہم نے قرضہ دینا ہے، نہ اس سے خائف ہیں اور نہ ہی اسے جوابدہ ہیں، پاکستان میں کھڑے ہو کر افغانستان میں آپریشن ہو سکتا ہے، مگر اس سے دونوں ملکوں کے تعلقات مزید خراب ہونگے۔ سماء

NISAR ALI KHAN

TALIBAN

IDENTIFICATION

#IamAsfandYar #NationSalutesItsHeroes

BADABERATTACK

SURGICAL STRIKES

Tabool ads will show in this div