فائیوجی ٹیکنالوجی کی منصوبہ بندی، ایڈوائزری کمیٹی تشکیل

روڈ میپ واضح کرےگی
Jan 08, 2020

پاکستان نے فائیوجی ٹیکنالوجی کی جانب عملی قدم اٹھالیا ہے اوروزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی نے فائیوجی ٹیکنالوجی کی منصوبہ بندی کیلئے  ایڈوائزری کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔

وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کی کمیٹی اہم ہدایات کی روشنی میں فائیوجی ٹیکنالوجی کی تیاری کا روڈ میپ واضح کرے گی۔

ترجمان وزارت آئی ٹی کا کہنا ہے کہ کمیٹی کا مقصد فائیو جی اسپیکٹرم کی تیاری کیلئے ٹیلی کام انفراسٹریکچر کا جائزہ لینا ہے۔ یہ کمیٹی فائیوجی استعمال کرنے والےصارفین کےتحفظ کیلئےبھی کام کرےگی۔

اس کمیٹی میں وزارت آئی ٹی، پی ٹی اے فریکونسی ایلوویشن بورڈ، وزیر اعظم آفس اور ٹاسک فورس کے نمائندے شامل ہونگے۔

واضح رہے کہ حکومت پاکستان کی پالیسی ہدایات کے مطابق پی ٹی اے نے 5جی ٹیکنالوجی اور متعلقہ خدمات کی آزمائشی بنیادوں پر فراہمی/ ٹرائل کے لئے فریم ورک فار فیوچر ٹیکنالوجیز (خاص طور پر ففتھ جنریشن وائرلیس نیٹ ورک آف پاکستان) جون 2019 میں جاری کیاتھا۔

مذکورہ پالیسی ہدایات پرعمل کرتے ہوئے پی ٹی اے نے جاز(پی ایم سی ایل) زونگ (سی ایم پاک) کو فائیو جی ٹیکنالوجی کے ٹیسٹ اور ٹرائل کے لئے محدود ماحول میں 6 ماہ کی اجازت دی ہے، اجازت صرف غیر تجارتی بنیادوں پر آزمائش تک ہی محدود ہے۔

پی ٹی اے ہمیشہ نئی ٹیکنالوجیز اور بہتر خدمات کو متعارف کرانے کی حمایت اور فروغ کے حوالے سے حوصلہ افزائی کرتا ہے،تاہم کسی بھی موبائل فون آپریٹر (سی ایم او) کی جانب سے مجوزہ مقصد کے علاوہ کوئی تاثر دینے کو گمراہ کن تصور کیا جائے گااورپی ٹی اے ضابطے کے تحت کاروائی کر سکتا ہے۔

پاکستان میں فائیو جی سروسز کاتجارتی بنیادوں پر آغاز مقررہ وقت اور حکومت پاکستان کی پالیسی ہدایات اورباقاعدہ ریگولیٹری منظوری کے تحت ہوگا۔

5G

Tabool ads will show in this div