ملالہ کی زندگی پر بننے والی فلم سینسربورڈ نے پاس کردی

malala اسلام آباد :  جرات اور بہادری کی مثال ملالہ یوسفزئی کا ایک اور اعزاز کہ گل مکئی کی زندگی پر بننے والی دستاویز فلم ''ہی نیمڈ می ملالہ'' سینسر بورڈ نے پاس کر دی ہے۔ فلم دو اکتوبر کو دنیا بھر میں سینماؤں کی زینت بنے گی۔ فخرپاکستان جرات و  بہادری میں بے مثال، دہشت گردوں کے منہ پر طمانچہ مارنے والی قوم کی بیٹی ملالہ یوسفزئی کی زندگی پر مبنی دستاویزی فلم ریلیز کیلئے تیار ہوگئی۔ ملالہ یوسفزئی نے عملی زندگی میں دہشت گردوں کے فلسفے کو پچھاڑتے ہوئے تعلیم و آگہی کا سفر جاری رکھا اور ملک و قوم کا سر فخر سے بلند کردیا۔۔ اسلام آباد میں فلم سنسر بورڈ کے چئیرمین مبشرحسن کے مطابق مرکزی فلم سنسر بورڈ نے ملالہ یوسف زئی کی زندگی پر بننے والی فلم کسی اعتراض کے بغیر پاس کردی ہے۔ فلم میں ملالہ یوسف زئی کی زندگی، تعلیمی جدوجہد اوراس پر حملے کے واقعات دکھائے گئے ہیں۔ بین الاقوامی سطح پریہ فلم  دو اکتوبر کو ریلیز کی جارہی ہے، لیکن پاکستان میں اس کی ریلیز کے لیے تاریخ ابھی مقرر نہیں کی گئی، فلم میں ملالہ کے والد ضیا الدین یوسف زئی اور ملالہ کے اہل خاندان کے ساتھ ساتھ ملالہ کے اساتذہ کے انٹرویوز بھی شامل ہیں۔ ملالہ کے نوبل پرائز وصول کرنے کے لمحات کو بھی فلم کا حصہ ہیں۔ سماء

ENGLAND

TALIBAN

MALALA YOUSUF ZAI

he named me malala

Nobel Peace Prize Laureate

Tabool ads will show in this div