ٹیکس قوانین کا دوسرا ترمیمی آرڈیننس 2019ء جاری

کرنسی اور قیمتی زیورات کی اسمگلنگ پر 14 سال قید ہوگی

حکومت نے ٹیکس قوانین کا دوسرا ترمیمی آرڈیننس 2019 جاری کردیا، کرنسی اسمگلنگ پر بھاری جرمانہ اور 14 سال تک قید کی سزا ہوگی، کسٹمز، انکم، سیلز اور ایکسائز ایکٹ میں بھی ترامیم کردی گئیں۔

ایف اے ٹی ایف کی سفارشات پر عملدرآمد اور ملک کو گرے لسٹ سے نکالنے کیلئے حکومت نے بڑا اقدام اٹھالیا، ٹیکس قوانین کا دوسرا ترمیمی آرڈیننس 2019ء جاری کردیا گیا، جس کے تحت کسٹمز ایکٹ 1969ء میں ترمیم کردی گئی۔

ترمیم کے مطابق کرنسی اسمگلنگ پر 14 سال تک قید اور بھاری جرمانے کی سخت سزائیں ہوں گی جبکہ سونا، چاندی اور قیمتی زیورات کی اسمگلنگ میں ملوث افراد کو بھی 14 سال تک قید کی سزا دی جاسکے گی۔

نئی ترمیم کے تحت تاجروں کیلئے کاروبار کی رجسٹریشن لازمی قرار دی گئی ہے، ورنہ لاکھوں روپے جرمانہ اور کاروبار بند ہوسکتا ہے، سالانہ 10 کروڑ سیل پر 0.5 فیصد ٹیکس عائد اور درآمدی مصنوعات پر ری ٹیل پرائس لکھنا لازمی ہوگا۔

ٹیکس قوانین ترمیمی آرڈیننس 2019ء کے تحت 100 ڈالر تک کے موبائل فون سیٹ پر ڈیوٹی میں کمی کردی گئی، جو 1350 روپے سے کم ہو کر 200 فی موبائل ہوگئی ہے۔

TAX

Tabool ads will show in this div