وی آئی پی مریض کی شکایت پربلوچستان حکومت جاگ اٹھی

اسپتالوں کو فنڈز جاری

بلوچستان اسمبلی کے اسپیکر قدوس بزنجو کی اسپتال بیڈ پر لیٹے ویڈیو پیغام کے بعد صوبائی حکومت نے پھرتیاں دکھانا شروع کردی ہیں۔ محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن نے سابق سیکریٹری صحت حافظ عبدالماجد، ایم ایس سول اسپتال کوئٹہ فضل رحمان بگٹی اور دیگر متعلقہ حکام کو وضاحتی نوٹس جاری کردیئے جبکہ وزیراعلیٰ نے اسپتالوں کے لیے خطیر فنڈ کی منظوری بھی دے دی۔

گزشتہ روز اسپیکر قدوس بزنجو کی ایک ویڈیو سامنے آئی تھی جس میں وہ سول اسپتال کوئٹہ کے بیڈ پر لیٹے شکوہ کر رہے ہیں کہ میں ایک وی آئی مریض ہوں، اس کے باجود اسپتال کی حالت دیکھ کر افسوس ہورہا ہے۔ یہاں صفائی کا کوئی انتظام نہیں، واش رومز میں پانی نہیں ملتا جبکہ پہلے سے موجود سہولیات وسائل کو بھی ٹھیک سے استعمال نہیں کیا جاتا۔

قدوس بزنجو گزشتہ دور حکومت میں پراسرار طریقے سے بلوچستان کے وزیراعلیٰ بھی بن گئے تھے۔ اپنے ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ بطور وزیراعلیٰ اسپتالوں کے ہنگامی دورے بھی کیے تھے مگر صورتحال میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔

اسپیکر کے ویڈیو پیغام کے بعد وزیراعلیٰ جام کمال خان کی ہدایت پر محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن  نے متعلقہ افسران کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 24 گھنٹوں میں جواب دینے کی ہدایت کی ہے۔ بصورت دیگر ان کے خلاف بیڈا ایکٹ کے تحت کاروائی عمل میں لائی جاسکتی ہے۔

وزیراعلیٰ نے سول اسپتال اور صوبے کے دیگر اسپتالوں کی غیر تسلی بخش صورتحال کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے اسپتالوں میں صحت و صفائی کی سہولتوں کی عدم دستیابی پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔

دوسری جانب حکومت نے ہنگامی بنیادوں پر کوئٹہ کے بڑے سرکاری اسپتالوں کی مشینری، آلات اور عمارتوں کی مرمت کی مد میں اضافی فنڈز بھی جاری کردیے ہیں۔ محکمہ خزانہ نے محکمہ صحت کو مشینری اور آلات کی مرمت کی مد میں ایک کروڑ 70لاکھ روپے سے زائد جبکہ عمارتوں کی مرمت کی مد میں ایک کروڑ دس لاکھ روپے کے فنڈ جاری کردیئے ہیں۔

مشینری کی مرمت کے اضافی فنڈز سے سول اسپتال، شہید بے نظیر بھٹو اسپتال، فاطمہ جناح چیسٹ اینڈ جنرل اسپتال اور ہیلپرز آئی اسپتال کی غیر فعال مشینری اور آلات کو فعال بنایا جائے گا جبکہ سول اسپتال، بولان میڈیکل کمپلیکس اسپتال، شیخ زید اسپتال، فاطمہ جناح چیسٹ اینڈ جنرل اسپتال، ہیلپزر آئی اسپتال اور شہید بے نظیر بھٹو اسپتال کے عمارتوں کی ضروری مرمت کی جائے گی۔

HEALTH

Jam Kamal Khan

Tabool ads will show in this div