برطانوی خفیہ ایجنٹس کوسنگین جرائم کی کھلی چھوٹ مل گئی

نئی حکومت کی پالیسی غیرقانونی ہے، انسانی حقوق کی تنظیمیں

برطانیہ کی ایک عدالت نے برطانوی انٹلیجنس سروس ایم آئی فائیو کو اختیار دیا ہے کہ وہ اپنے ایجنٹس کو قتل، اغوا اور تشدد سمیت کسی بھی قسم کے سنگین جرائم میں ملوث ہونے کی اجازت دے سکتی ہے۔

مختلف غیر ملکی اخبارات میں شائع ہونے والی رپورٹس کے مطابق برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کی نئی حکومت نے اس حوالے سے نئے قوانین وظع کئے تھے جنہیں انسانی حقوق کی تنظیموں نے انویسٹیگیٹری پاورز ٹریبیونل میں چیلنج کیا تھا تاہم ٹریبیونل کے 5 میں سے 3 ججز نے برطانوی حکومت کی تھرڈ ڈائریکشن نامی اس پالیسی کے حق میں فیصلہ دیا جبکہ دو نے مخالفت کی۔ یہ ٹریبیونل انٹیلیجنس ایجنسیز کے خلاف قانونی شکایات کی سماعت کرتا ہے۔

عدالتی فیصلے سے حکومت کے اس اقدام کو تقویت ملی ہے کہ وہ قوانین میں ایسی تبدیلیاں کرے جس سے وہ روسی اور شمالی کوریائی سمیت دیگر غیرملکی جاسوسوں و تخریب کاروں کی بیخ کنی میں امریکہ کی برابری کر سکے۔

فیصلے کے مطابق ایم آئی فائیو کے ایجنٹس قومی سلامتی کے پیش نظر دہشت گردی یا منظم جرائم سمیت کسی بھی کیس کے دوران سیکریٹ سروس کے افسران کی اجازت سے کسی بھی مجرمانہ سرگرمی میں ملوث ہوسکتے ہیں۔

اپنے 56 صفحات پر مشتمل فیصلے میں عدالت کا کہنا تھا کہ اگر ایم آئی فائیو کو جرائم پیشہ تنظیموں میں اپنے ایجنٹس پلانٹ کرنے یا انہیں جرائم کرنے سے روکا گیا تو یہ اس سیکورٹی سروس کی لازمی و بنیادی سرگرمیوں پر حملے کے مترادف ہوگا۔ عدالت کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس حکومت کی اس پالیسی سے انسانی حقوق کی خلاف ورزی نہیں ہوتی۔

دوسری جانب انسانی حقوق کی تنظیموں نے اس پالیسی کو مشکوک قرار دیتے ہوِئے برطانوی حکومت پر کڑی تنقید کی اور ٹریبیونل کے فیصلے کے خلاف اپیل میں جانے کا اعلان کیا۔ ان تنظیموں کا کہنا تھا کہ یہ پالیسی جو خفیہ ایجنٹس کو مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی اجازت دیتی ہے یکسر غیر قانونی ہے۔

ہوم آفس کے ایک اعلی افسر نے ایک اخبار کو ای میل کئے گئے پیغام میں کہا کہ ہمیں خوشی ہے کہ ٹریبیونل نے حکومت کے حق میں فیصلہ دیا اور اس بات کو تسلیم کیا کہ خفیہ ایجنٹس کا مجرمانہ سرگرمیوں میں حصہ لینا ان کے اہم ترین مقاصد کے حصول کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے، تاہم ہوم آفس نے اس پر روشنی ڈالنے سے انکار کیا کہ ایم آئی فائیو کے ایجنٹس کن کن جرائم میں ملوث رہے ہیں۔

agents

MI5

Tabool ads will show in this div