امریکی گلوکارہ بھی ہراسانی کا شکار

یہ انکشاف ان کے والد نے ایک انٹرویو کے دوران کیا

مشہور زمانہ امریکی گلوکارہ بیونسے کے والد میتھیو کنولز کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی کو بھی 16 سال کی عمر میں راک بینڈ کے دو ممبرز کی جانب سے جنسی ہراساں کیا گیا۔

ایک انٹرویو کے دوران بیونسے کے والد میتھیو کنولز نے بتایا کہ سال 2000 کے آغاز میں بیونسے کا بینڈ ڈیسٹنی چائلڈ ایک اور بینڈ جیگڈ ایج کے ہمراہ ایک دورے پر روانہ ہوا جہاں راک بینڈ کے نوجوانوں نے بیونسے کے ساتھ ساتھ ان کے بینڈ کی ایک اور گلوکارہ کیلی رولینڈ کو بھی جنسی طور پر ہراساں کیا۔ گلوکارہ کے والد نے بتایا کہ مجھے آج بھی یاد ہے کہ بیونسے اور کیلی نے مجھے فون کیا تھا اور کہا تھا کہ جیگڈ ایج بینڈ کے دو نوجوان ہمیں مسلسل ہراساں کررہے ہیں،جس کے بعد میں نے فوری اس بینڈ کو سفر کے بیچ میں ہی بس سے اتار دیا تھا۔

واضح رہے کہ بیونسے کے والد ان کے مینجر بھی رہ چکے ہیں جبکہ سال 2014 میں بیونسے فوربز فہرست میں سب سے زیادہ کمانے والی سلیبرٹی کا اعزاز حاصل کرچکی ہیں اس کے بعد ان کے البم نے 2016 میں دنیا کے سب سے زیادہ فروخت ہونے والے البم کا اعزاز حاصل کیا تھا۔

HARRASMENT

#MeToo

Tabool ads will show in this div