ترکی:پاکستانی وزیرخارجہ کابھارتی وزیرکی تقریرکابائیکاٹ

احتجاجاً باہر جا کر دنیا کو پیغام دیا

استبول میں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کے موقع پر پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارتی ہم منصب کے خطاب کا بائیکاٹ کردیا۔

استنبول میں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں وزير خارجہ شاہ محمود بھارتی ہم منصب کا خطاب شروع ہوتے ہی احتجاجاً بائیکاٹ کرکے باہر چلے گئے۔ اس موقع پر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے پیش نظر تقریر کا بائیکاٹ کیا۔

فورم سے اپنے خطاب میں پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پورے ایشیاء کا امن افغانستان کے امن سے مشروط ہے ، افغان تنازع کا کوئی فوجی حل نہیں۔ انہوں نے کہا کہ طاقت کے استعمال کی سوچ عام افغانوں کے دکھوں کو مزید بڑھانے کے مترادف ہے، مسئلے کے پرامن تصفیے کی سوچ کی پرزور حمایت کرتے ہیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا امریکا اور طالبان کے درمیان مذاکرات کی حالیہ بحالی مثبت پیش رفت ہے، جس سے افغانستان اور خطے میں پائیدار امن و استحکام کی راہ ہموار ہوگی، پاکستان تمام فریقین،علاقائی اور عالمی شراکت داروں کے ساتھ مل کر کوششیں جاری رکھے گا۔

انہوں نے ایک بار پھر دنیا پر واضح کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان سے تعلق اور خیر خواہی میں پاکستان سے بڑھ کر دنیا میں نہ کوئی ہے اور نہ ہو سکتا ہے۔ اہم کانفرنس کے موقع پر شاہ محمود قریشی نے ترک صدر رجب طیب اردگان اور ایلس ویلز سے بھی ملاقات کی۔

HEART OF ASIA

SHAH MAHMOOD

Tabool ads will show in this div