کالمز / بلاگ

عبدالستار ایدھی، نوبل امن انعام کے اصل حقدار

Sep 17, 2015
[epa02912892 Abdul Sittar Edhi (L), head of Edhi foundation, collects donation for the flood affected victims in Sindh province, during a demonstration in Hyderabad, Pakistan, on 12 September 2011. Reports state that the death toll in monsoon flooding in southern Pakistan has risen to 206 as the number of people affected grew to more than 4.6 millions. The floods, triggered by heavy monsoon rains have wreaked havoc in the southern province of Sindh in the last few weeks, have caused breaches in many water canals in
[epa02912892 Abdul Sittar Edhi (L), head of Edhi foundation, collects donation for the flood affected victims in Sindh province, during a demonstration in Hyderabad, Pakistan, on 12 September 2011. Reports state that the death toll in monsoon flooding in southern Pakistan has risen to 206 as the number of people affected grew to more than 4.6 millions. The floods, triggered by heavy monsoon rains have wreaked havoc in the southern province of Sindh in the last few weeks, have caused breaches in many water canals in
Edhi1 تحریر ؛ محمد نثار خان ایدھی فاؤنڈیشن دنیا کی سب سے بڑی فلاحی اور غیر منافع بخش تنظیم ہے، اس کے بانی عبدالستار ایدھی پاکستان کے وہ بہترین انسان ہیں جو 64 سال سے عوامی خدمت میں مصروف ہیں۔ ایدھی فاؤڈیشن کا قیام پاکستان کے قیام کے 3 سال بعد 1951ء میں کراچی کے ایک کمرے کے مکان میں عمل میں لایا گیا، اپنے مقصد میں مخلص ہونے کے باعث اس تنظیم کے پاس اب دنیا کی سب سے بڑی ایمبولینس سروس ہے، لاتعداد نرسنگ ہومز ہیں جو لوگوں کا بالکل مفت علاج کرتے ہیں۔ ایدھی فاؤنڈیشن کے پاکستان بھر میں لاتعداد یتیم خانے، کلینک، عورتوں کے حفاظتی مراکز، فوڈ کچن، نشہ کے عادی افراد اور ذہنی توازن کھونے والے افراد کیلئے بحالی کے کئی مراکز ہیں۔ پاکستان میں 60.3 فیصد آبادی صرف 300 روپے یومیہ پر گزر بسر کررہی ہے جبکہ کل آبادی کا 40 فیصد غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزار رہی ہے، ان حالات میں ایدھی فاؤنڈیشن کی خدمات پاکستان کے غریب اور لاچار لوگوں کیلئے کسی معجزے سے کم نہیں ہیں۔ Edhi4 ایدھی فاؤنڈیشن کے روح رواں عبدالستار ایدھی کے بارے میں ایک بات وثوق کے ساتھ کہی جاسکتی ہے کہ وہ عالمی شہرت پانے کے باوجود ایک عاجز انسان ہیں، انہوں نے اپنی زندگی کپڑوں کے چند جوڑوں میں گزاری اور فلاحی ادارے سے خدمات کے صلے میں کوئی تنخواہ بھی نہیں لی ہے۔ Edhi5 ایدھی صاحب نے اپنی ساری زندگی پاکستانی معاشرے میں عدام مساوات کیخلاف اور غریبوں کے حق میں آواز اٹھانے میں گزاری، عبدالستار ایدھی کو نوبل پیس پرائز دلوانے کیلئے ایک مہم پٹیشن چلائی جارہی ہے، ابتدائی طور پر اس پٹین پر فلاحی کاموں کے باعث مسیحا کہلانے والے اس عظیم انسان کو دنیا کا سب سے بڑا امن انعام دلوانے کے حق میں صرف 24 گھنٹوں میں 40000 افراد نے دستخط کئے ہیں تاہم عالمی پیس پرائز کمیٹی کو راضی کرنے کیلئے ابھی مزید ووٹوں کی ضرورت ہے۔

Social Worker