کراچی سرکلرریلوےمنصوبےکی راہ میں ایک اوررکاوٹ

وفاق اورسندھ حکومت آمنےسامنے
 

کراچی سرکلر ريلوے منصوبےکی راہ ميں بڑی رکاوٹ سامنے آگئی ہے۔

کراچی کے ٹرانسپورٹ مسائل کے ممکنہ حل کے لیے سرکلر ریلوےمنصوبے پر کام سے پہلے ہی وفاق اور سندھ حکومت پھر آمنےسامنے آگئے ہیں۔ پاکستان ریلوے نے سرکلرریلوےمتاثرین کومتبادل زمین،معاوضہ دینے سےانکارکرديا ہے۔

پاکستان ریلوے اور اربن ٹرانسپورٹ کمپنی نے سندھ اسمبلی کو مراسلہ بھیجا ہے جس میں درج ہے کہ سرکلرریلوے متاثرین کومتبادل زمین اورمعاوضہ نہیں دے سکتے۔

پاکستان ریلوے نے کہا ہے کہ سرکلر ریلوے متاثرین کی دوبارہ آباد کاری سندھ حکومت کرے۔ پاکستان ریلوے نے متاثرین کو محکمہ ٹرانسپورٹ سندھ سے رجوع کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

واضح رہے کہ کراچی سرکلر ریلوے کے ٹریک پر4 ہزار653 کچی اور پکی تجاوزات قائم ہیں۔ پی ٹی آئی کے رہنماء خرم شیرزمان نے متاثرین کو متبادل زمین دینے کا مطالبہ کیا تھا۔ پاکستان ریلوے نے خرم شیر زمان کی تحریک التواء پر جواب سندھ اسمبلی کوارسال کیا ہے۔

 

Karachi Circular Railway

Mass Transit

Tabool ads will show in this div