بی ایم ڈبلیو میری نہیں، سندھ حکومت نے خریدی، گورنر

میرے پاس کوئی بی ایم ڈبلیو گاڑی نہیں، عمران اسماعیل

گورنر سندھ عمران اسماعیل نے واضح کیا ہے کہ ميرے پاس کوئی بی ايم ڈبليو گاڑی ہے ہی نہيں، جس گاڑی کے بارے ميں باتيں ہو رہی ہيں وہ گورنر ہاؤس کی ہے اور سندھ حکومت نے خریدی تھی۔

سماء کے پروگرام نديم ملک لائيو ميں گفتگو کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل نے پاکستان کی تباہی کی ذمہ دار ماضی کی دونوں حکومتوں کو قرار دیتے ہوئے کہا کہ احتساب پی ٹی آئی حکومت کی پہلی ترجیح ہے، احتساب کے عمل کی ہوا کا کوئی رخ نہيں ہونا چاہئے، احتساب کا عمل کرپشن کے خاتمے کيلئے ہے، وزيراعظم کا کہنا تھا نواز شريف کی طبيعت واقعی خراب ہے، انہیں علاج کيلئے جانا چاہئے، وفاقی حکومت نے نواز شريف کے علاج کيلئے ميڈيکل بورڈ تشکيل ديا اور ہر ممکن طبی سہولیات فراہم کیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وزيراعظم نے کہا غريب اور امير کيلئے ايک قانون ديکھنا چاہتے ہيں، حکومت، فوج اور عدليہ ايک پيج پر ہوں تو اس سے بہتر کیا چیز ہے، اداروں کے درميان کسی قسم کی دراڑ نہيں، عمران خان جو کہتے ہيں وہ کرکے دکھاتے ہيں، پاکستان کا اميج اور معيشت بہتر ہورہی ہے، عمران خان بہت مطئمن ہیں۔

ندیم ملک سے گفتگو میں گورنر سندھ نے کہا کہ نیا وزیراعظم یا نیا الیکشن کسی کے دل کی خواہش ہوسکتی ہے، پی ٹی آئی کے لیڈر صرف عمران خان ہیں اور رہیں گے، آصف زرداری کیخلاف عدالتیں جو فیصلہ کریں گی قبول ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ میرے پاس کوئی بی ایم ڈبلیو گاڑی نہیں، جس گاڑی کی بات ہورہی ہے وہ سرکاری ہے، یہ گاڑی میری فیملی کے استعمال میں ہے، جو سندھ حکومت نے خریدی تھی، سيکیورٹی اداروں کے علم ميں ہے کہ گاڑی گورنر ہاؤس کی ہے، جب ٹی وی پر خبر چلی تو سندھ حکومت کو ايکشن لينا چاہئے تھا، وزیراعلیٰ سندھ کے ساتھ تعلقات میں بریک ڈاؤن ہے، میں عمران خان کو نہیں روک سکتا، وزیراعلیٰ، بلاول کو نہیں روک سکتے۔

MURAD ALI SHAH

Imran Ismael

Tabool ads will show in this div