نفرت انگیزتقریرکیس:متحدہ بانی الطاف حسین عدالت میں پیش

بذریعہ ٹیلی فون کراچی پریس کلب پر تقریر کی تھی
Nov 01, 2019

متحدہ قومی موومنٹ کے بانی الطاف حسین سینٹرل کرمنل کورٹ پہنچ گئے۔ الطاف حسین پر آج فرد جرم عائد کیے جانے کا امکان ہے۔

نمائندہ سما کے مطابق متحدہ بانی کی ضمانت کی شرائط میں نرمی پر بھی آج بات ہونے کا امکان ہے۔ آج ہونے والی سماعت پر فیصلہ کیا جائے گا کہ الطاف حسین کے خلاف ٹرائل کا آغاز کس تاریخ کو کرنا ہے۔

واضح رہے کہ نفرت انگیز تقریر کے کیس میں برطانوی عدالت نے بانی ایم کیو ایم کی مشروط ضمانت منظور کرلی تھی، تاہم عدالت نے ان کی نقل و حرکت کو مشروط کر دیا تھا۔

عدالت نے بانی ایم کیو ایم پر سوشل میڈیا کے استعمال پر پابندی عائد کی تھی اور تمام ویب سائٹس سمیت اخبارات ، ٹی وی چینلز میڈیا سے دور رہنے کا حکم دیا تھا۔ جمعہ کو بانی متحدہ الطاف حسین کی ضمانت کا آخری روز تھا۔ انھیں سدک پولیس اسٹیشن میں اسکاٹ لینڈ یارڈ نے ان کی تقاریر پر سوال و جواب کیلئے طلب کیا گیا تھا۔

 

واضح رہے کہ جون میں بھی الطاف حسین کو طلب کیا گیا تھا۔ بعد ازاں انہیں ضمانت پر چھوڑ دیا گیا تھا۔ انہوں نے وکیل کے ذریعے ضمانت میں توسیع لی تھی۔

بانی ایم کیوایم الطاف حسین ضمانت پررہا

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ الطاف حسین پر الزام ہے کہ انہوں نے 22 اگست 2016 کو پاکستان کے خلاف بذریعہ ٹیلی فون کراچی پریس کلب پر تقریر کی تھی۔ ان پر اپنی تقاریر کے ذریعے عوام کو فسادات کے لیے اُکسانے کا بھی الزام ہے۔

scotland yard

Tabool ads will show in this div