سی پی ايل سی کی رپورٹ نےپوليس کارکردگی کابھانڈا پھوڑدیا

اسٹريٹ کرائم سالانہ5 ارب سےزائد کادھندا بن گی

روشنيوں کے شہر کراچی ميں ڈاکوؤں اور چوروں نے اندھير مچادی ہے، عوام کی نہ جان محفوظ نہ مال محفوظ ہے، اسٹريٹ کرائم سالانہ5  ارب سے زائد کا دھندا بن گيا۔

سی پی ايل سی نے پوليس کارکردگی کی رپورٹ جاری کردی جس کے مطابق يکم ستمبر سے 30 ستمبر کے دوران تقريباً 19 کروڑ روپے کی189 گاڑياں بھی چھينی يا چوری کی گئيں ۔

کراچی کے لوگوں سے سالانہ 2 ارب28 کروڑ روپے کی گاڑياں لوٹ لی جاتی ہيں، ايک ماہ ميں چور اور ڈاکو 2 ہزار 9 سو 53 موٹر سائيکليں بھی لے اڑے، جن کی ماليت9 کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے، يعنی سالانہ تقريباً ايک ارب 8 کروڑ کی موٹرسائيکليں چھينی يا چوری کی جاتی ہيں ۔

ستمبر ميں 4 ہزار سے زائد شہری موبائل فون سے بھی محروم کردیے گئے جن کی مالیت 4 کروڑ ہے، يعنی سالانہ تقریباً 50 کروڑ روپے ماليت کے موبائل فون چھينے يا چوری کيے جاتے ہيں، يہ اعداد وشمار صرف رپورٹ ہونے والے جرائم کے ہيں۔

بہت سے شہری موبائل فون چھينے جانے کی رپورٹ بھی درج نہيں کراتے جبکہ اس دوران اغوا برائے تاوان کی ايک اور بھتہ خوری کی 3 وارداتيں رپورٹ ہوئيں۔

Tabool ads will show in this div