غداری کیس کی سماعت یکم جنوری تک ملتوی

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد: سابق صدر پرویز مشرف کو غداری کیس میں آج کی پیشی سے استثنیٰ دے دیا گیا ہے۔ خصوصی عدالت میں مقدمے کی آئندہ سماعت یکم جنوری کو ہوگی جس میں فرد جرم پڑھ کر سنائی جائے گی۔

عدالت نے سابق صدر پرویز مشرف کی حاضری یقینی بنانے کی ہدایت بھی کی ہے۔

سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف غداری کیس کی سماعت کا آج پہلا دن تھا۔ ملکی تاریخ کے اہم ترین مقدمے کی سماعت اسلام آباد کی نیشنل لائبریری میں قائم خصوصی عدالت میں ہوئی جس کی سربراہی جسٹس فیصل عرب نے کی ۔۔ دیگر ارکان میں جسٹس یاور علی اور جسٹس طاہرہ صفدر شامل تھے ۔

پرویز مشرف سمن کے باوجود پیش نہ ہوئے ۔۔ ان کے وکیل انور منصور خان نے بتایا کہ سابق صدر سیکورٹی خدشات کے باعث پیش نہیں ہوئے ۔۔ انھیں حاضری سے استثنیٰ دیا جائے۔

استغاثہ کے وکیل نصیر الدین نیر نے استثنیٰ کی مخالفت کی اور کہا کہ فوجداری مقدمے میں ملزم کی حاضری ضروری ہے ۔۔ سیکورٹی خدشات کی زبانی بات کی جارہی ہے کوئی تحریری درخواست موجود نہیں ۔۔ پرویز مشرف خود آئے نہ ہی استثنیٰ کی استدعا کی ۔۔ سمن پر ملزم پیش نہ ہو تو ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کئے جانے چاہئیں ۔۔

پرویز مشرف کے دوسرے وکیل احمد رضا قصوری نے کہا کہ سابق صدر پر دو خود کش حملے ہوچکے ہیں۔ انٹیلی جنس اطلاعات کے مطابق تین دہشت گرد پنجاب میں داخل ہوچکے ہیں۔ دیگر عدالتیں بھی تمام مقدمات میں پرویز مشرف کو حاضری سے استثنیٰ دے چکی ہیں ۔۔

بینچ کے رکن جسٹس یاور علی نے احمد رضا قصوری کو بولنے سے روک دیا اور کہا کہ عدالت میں صرف ایک وکیل کو بات کرنے کی اجازت ہے۔ بینچ کے سربراہ جسٹس فیصل عرب نے وکلاء صفائی سے کہا کہ سیکورٹی خدشات سے ہم بھی آگاہ ہیں۔ تمام حالات کو پیش نظر رکھ کر فیصلہ کیا جائے گا۔ حاضری سے استثنیٰ کی تحریری درخواست ابھی جمع کرادیں۔ عدالت کی ہدایت پر وفاق کی داخل کردہ شکایت کی نقل پرویز مشرف کے وکلاء کے حوالے کی گئی ۔۔

وکیل استغاثہ نے فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ دینے کے استدعا کی تاہم عدالت نے وکلاء صفائی کو استثنیٰ کی تحریری درخواست جمع کرانے کیلئے سماعت میں وقفہ کردیا ۔۔

پرویز مشرف کے وکلاء نے بینچ کی تشکیل، دائرہ اختیار اور ججوں کی موزونیت پر اعتراض کیا۔ انور منصور خان نے بینچ کی تشکیل اور ججوں کی موزونیت کیخلاف دو الگ الگ درخواستیں دائر کیں جبکہ عدالت کے دائرہ اختیار کے حوالے سے درخواست خالد رانجھا ایڈووکیٹ دائر کرینگے ۔۔ سماء

کی

کیس

warrant

Tabool ads will show in this div