تعمیراتی شعبے کیلئے فکسڈ ٹیکس اسکیم لانے کی تیاری

نیاپاکستان ہاؤسنگ اسکیم میں سرمایہ کاری پر90 فيصدچھوٹ ملے گی

حکومت نے تعمیراتی شعبے کيلئے فکسڈ ٹیکس اسکیم لانے کی تیاری کرلی، بلڈرز کو ایف بی آر سے رجسٹريشن کرانا ہوگی، نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم میں سرمایہ کاری کرنیوالوں کو 90 فيصد ٹیکس مراعات دی جائیں گی۔

حکومت نے نيا پاکستان ہاؤسنگ اسکيم ميں سرمايہ کاری کی ترغیب کیلئے ٹیکسز میں چھوٹ کی تیاری کرلی، ایف بی آر کے مطابق تعمیراتی شعبے کو اصلاحاتی پیکیج کے تحت ٹیکس میں 90 فیصد تک رعایت دی جائے گی۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے مطابق حکومت نے مسودہ تیار کرلیا، جس کے مطابق تعمیراتی شعبے کيلئے فکسڈ ٹیکس اسکیم متعارف کرائی جائے گی، ٹيکس کتنا ہوگا اِس کا فيصلہ اسٹیک ہولڈز سے مشاورت کے بعد کيا جائے گا، تاہم بلڈرز کو اسکیم سے فائدہ اٹھانے کیلئے ایف بی آر سے رجسٹریشن کرانا ہوگی۔

مسودے کے مطابق رہائشی اور کمرشل تعمیرات کيلئے فی اسکوائر فٹ الگ الگ ریٹ مقرر کیا جائے گا، اسکیم کے تحت فکسڈ ٹیکس میں ہر سال اضافہ بھی ہوگا، حکومت رواں ماہ اسکیم کو منظوری کيلئے ای سی سی (اکنامک کو آرڈینیشن کمیٹی) میں پیش کرے گی۔

TAX

CONSTRUCTION INDUSTRY

Tabool ads will show in this div