رشید گوڈیل پرحملہ مذاکرات سبوتاژ کرنیکی کوشش ہے:فضل الرحمان، فاروق ستار

ویب ایڈیٹر:

کراچی: قومی اسمبلی سے استعفوں کے معاملہ پرایم کیوایم سے مذاکرات کے بعد مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگومیں کہا کہ رشید گوڈیل پر حملے کے باوجود متحدہ کے رہنماؤں کا رویہ مثبت ہے، حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ استعفوں کے معاملے پر مذاکراتی عمل کو سبوتاژ کرنےکی کوشش کی گئی لیکن اس کے باوجود ایم کیو ایم رہنماؤں کا رویہ مثبت رہا۔

استعفوں کے معاملے پر بات کرتے ہوئے فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم جذبہ خیرسگالی کےتحت مسئلے کاحل نکالنا چاہتے ہیں، اگرکوئی ناراض ہوجائے تو اس کے گھر جانا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرے پاس پاور ہے، متحدہ کواسلام آباد آنے پر آمادہ کرلیا ہے۔

مزید پڑھیے: ایم کیو ایم کے رہنماء رشید گوڈیل کار حملے میں شدید زخمی

متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستارنے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کے بعد میڈیا سے گفتگومیں کہا کہ مذاکرات میں مثبت پیشرفت کی امید ہے، رشید گوڈیل پر حملہ مذاکرات سبوتاژ کرنے کی کوشش لگتی ہے۔

ایم کیو ایم رہنماء فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیوایم کراچی آپریشن کےخلاف نہیں، چاہتے ہیں آپریشن شفاف اورغیرجانبدارانہ ہو، ہم نے آئینی اورقانونی وجوہات کی بناء پراستعفےدیے۔

فاروق ستار کا مزید کہنا تھا کہ فضل الرحمان پہلی مرتبہ ثالث کی حیثیت سے نائن زیرو آئے، ایم کیوایم اورالطاف حسین نےان پراعتماد کا اظہار کیا۔ فضل الرحمان سے بات چیت جاری تھی کہ رشیدگوڈیل پرحملہ کی اطلاع ملی۔ سماء

90

FAROOQ SATTAR

mqm leader

jui f

Tabool ads will show in this div