بلوچستان بھر میں ینگ ڈاکٹروں کی ہڑتال

مریضوں کو مشکلات کا سامنا

کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں ینگ ڈاکٹروں کی ہڑتال 17 ویں روز بھی جاری ہے۔

 بلوچستان میں ہڑتال کے باعث تمام سرکاری اسپتالوں کی او پی ڈیز بند  ہیں جس کی وجہ سے مریضوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ مریضوں نے صوبائی حکومت سے ینگ ڈاکٹروں کی ہڑتال کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ینگ ڈاکٹر ایسوسی ایشن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ  نئے سیکورٹی ایکٹ کو نافذ کئے جانے تک فرائض انجام نہیں دیں گے، اسپتالوں میں سہولیات کے فقدان کے باعث مریضوں اور ان کے لواحقین کے احتجاج و تشدد کا سامنا ڈاکٹروں کو کرنا پڑتا ہے، جب تک مطالبات نہیں مانے جائیں گے،ہڑتال جاری رہے گی۔

صوبائی وزیر صحت نصیب اللہ مری نے کہا ہے کہ تمام ینگ ڈاکٹر نہیں بلکہ مخصوص ٹولہ ہڑتال کررہا ہے،عوام کو مافیا کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑیں گے اور ان کے خلاف جلد ایکشن لیا جائے گا۔

 

Quetta Health

Tabool ads will show in this div