آج مقبوضہ کشمیر میں خون خرابے کا خدشہ ہے،پاکستان

کشمیر،لوگ آج جان ہتھیلی پر رکھ کر نکلیں گے

پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے خدشے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٓاج مقبوضہ کشمیر میں بھارت بڑے پیمانے پر خون خرابہ کرسکتا ہے، بھارت کی جانب سے مصنوعی فلیگ ٓاپریشن کا امکان ہے۔

سما سے خصوصی گفت گو میں پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ میں دنیا بھر کی توجہ اس جانب مبذول کرانا چاہتا ہوں، بھارت اج کوئی نیا ڈرامہ رچانے جا رہا ہے، نماز جمعے کے بعد لوگ بڑی تعداد میں سڑکوں پر نکليں گے، بھارتي ميڈيا نے پراپيگنڈہ شروع کرديا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نئی شازش کرنے کیلئے بھارت کہے گا کہ افغانستان سے کچھ دہشت گرد مقبوضہ کشمير ميں داخل ہوئے، بھارت کو خدشہ ہے کہ لوگ نکلیں گے تو وادي ميں خون خرابہ ہوسکتا ہے، خون خرابے سے توجہ ہٹانے کيلئے بھارت پاکستان پر الزام لگا سکتا ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ 23 دن پہلے اقوام متحدہ سيکريٹري جنرل کو خطوط لکھے، اقوام متحدہ کو خط ميں فالس فليگ آپريشن کا ذکر کيا تھا، آج دوبارہ سیکيورٹي کونسل کو خط لکھوں گا، کشمیریوں کے پاس کھانے کو کچھ نہیں، لوگ جان ہتھيلي پر رکھ کر باہر نکلنے کا ارادہ کرچکے ہيں، ہيومن رائٹس تنظيموں کي توجہ اس جانب دلانا چاہتا ہوں، ميڈيا کے ذريعے اپنا پيغام دنيا کو پہنچا رہا ہوں، بھارت کا اصل چہرہ دنيا کے سامنے آنا چاہيے۔

سفارتی محاذ پر پاکستانی اقدامات سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ پاکستان بھرپور اور بروقت دنیا کو باور کرا رہا ہے کہ اس کا نوٹس لے، عالمی قوتیں جو خاموش بیٹھی ہیں، انہیں آگے بڑھنا ہوگا، اس کے اثرات پوری دنیا اور خطے پر ہونگے اور یہ انتہائی سنجیدہ اثرات ہونگے، دونوں ممالک نیوکلر میزائل رکھتے ہیں۔

مقبوضہ وادی کی ابتر صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وادی میں مکمل لاک ڈاون ہے، لوگوں کے اپنوں سے رابطے بند ہیں، وہاں صحافی نہیں جا سکتے، تمام نیٹ ورک بند ہیں، یہ پاکستان کا فرض بنتا ہے کہ ان کے ساتھ کھڑے ہوں اور دنیا کو درست ٓائینہ دکھائیں۔

ایف اے ٹی ایف سے متعلق سوال پر وزیر خارجہ نے کہا کہ ايف اے ٹي ايف سے متعلق بھارتي پراپيگنڈہ جھوٹا ہے، بھارت کو ايف اے ٹي اے معاملے پر منہ کي کھاني پڑي ہے۔

SHAH MAHMOOD

Tabool ads will show in this div