جب تک کراچی کا پيسہ کراچی پر نہيں لگتا عوام سندھ حکومت کو ٹيکس نہ ديں،وسیم اختر

ميئر کراچي نے عوام سے سول نافرماني کا مطالبہ کرديا ہے اور کہا ہے کہ سندھ حکومت کو ٹیکس نہ دیں۔

ملير سعود آباد ميں ميڈيا سے گفتگو ميں مئیر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ صدر پاکستان اور وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ ہے کہ جب تک کراچي کا پيسا کراچي پر نہيں لگتا عوام سندھ حکومت کو ٹيکس نہ ديں۔ انھوں نے کہا کہ عوام ٹيکس صرف وفاقي حکومت يا کے ايم سي کو ديں۔

مئیر کراچی نے مزید بتایا کہ سندھ حکومت موٹروہيکل، پراپرٹي ٹيکس ليتي ہے جبکہ ايس آر بي پروفيشنل، بي ٹي ايس ٹاورز ٹيکس بھی وصول کیا جاتا ہے۔

انھوں نے کہا کہ شہر کی صفائی کا یہ مستقل حل نہیں،سندھ حکومت اس کا مستقل حل دے، کراچی کا سالڈ ویسٹ منیجمنٹ بورڈ شہر کو صاف کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوگیا ہے۔

ميئر کراچی وسیم اختر ناکامی تسليم کريں،عوام سے معافی مانگيں،ترجمان سندھ حکومت

وسیم اختر نے واضح کیا کہ ہمارے پاس وسائل نہیں اور نہ ہی اختیار کہ شہریوں کو اس سے نجات دلائیں، ہم اپنے لوگوں کو تکلیف میں نہیں دیکھ سکتے، اس لئے وفاقی حکومت اور بحریہ ٹاؤن کی مدد حاصل کی۔

Tabool ads will show in this div